ایران منشیات کیخلاف جنگ کے صف اول میں کھڑا ہے

تہران، ارنا- ایران میں قائم اقوام متحدہ کے دفتر برائے منشیات اور جرائم کی روک تھام کے نمائندے نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ سے وابستہ بین الاقوامی تنظیمیں منشیات کے خلاف جنگ میں ایران کی قیادت کو تسلیم کرتی ہیں۔

ان خیالات کا اظہار" الکساندر فڈولف" نے آج بروز منگل کو ایرانی اینٹی نارکوٹکس پولیس کے چیف "مجید کریمی" سے ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس ملاقات میں دونوں فریقین نے منشیات کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے تعاون پر بات چیت کی۔

اقوام متحدہ کے نمائندے نے اسلامی جمہوریہ ایران کی انسداد منشیات پولیس کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں اور آپریشنل صلاحیت کو تقویت دینے کیلئے ایران کی تیاری پر روشنی ڈالی اور خطے اور ساتھ ہی بین الاقوامی سطح پر منشیات کیخلاف جنگ میں اسلامی جمہوریہ ایران کے کردار کو سراہا۔

انہوں نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ سے وابستہ بین الاقوامی تنظیمیں منشیات کے خلاف جنگ میں ایران کی قیادت کو تسلیم کرتی ہیں۔

اس موقع پر کریمی نے منشیات کی اسمگلنگ کیخلاف موثر جنگ میں اپنے بین الاقوامی فرائض کی انجام دہی میں مغربی ممالک کی لاپرواہی اور نا اہلی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے تعاون اور وسیع کوششوں کے باوجود ، یورپی ممالک خطرے کی سطح کے مطابق عمل نہیں کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے دنیا میں منشیات کی اسمگلنگ کیخلاف جنگ کے صف اول میں کھڑا ہونے کے طور 3 ہزار 819 شہیدوں اور 12 ہزار جانبازوں کی قربانی دے چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق، منشیات پکڑنے میں اسلامی جمہوریہ ایران دنیا میں پہلی پوزیشن رکھتا ہے۔اس شعبے میں ایران نے چار ہزار سے زائد قربانی دی ہے بلکہ منشیات کی لعنت کے خاتمے کے لئے ایران نے جانی اور مالی نقصانات بھی اٹھائے۔

ایران، پاکستان کے ساتھ پڑوسی ہونے اور افغانستان سے یورپ تک منشیات اسمگلنگ کرنے کے راستے میں واقع ہونے کی وجہ سے اس لعنت کی روک تھام کی فرنٹ لائن پر ہے اسی لیے ایران کو منشیات کیخلاف لڑائی میں سب سے زیادہ جانی اور مالی نقصان کا سامنا ہے۔

اب تک ہزاروں ایرانی اہلکار منشیات کے خلاف جنگ میں اپنی جانوں کا نذرانہ دے چکے ہیں۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 2 =