ایران نے منشیات کیخلاف جنگ میں مغربی ممالک کی کوتاہیوں کا ازالہ کیا ہے

تہران، ارنا - انسداد منشیات کے ہیڈ کوارٹرز کے دفتر برائے بین الاقوامی تعلقات کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ مغربی ممالک نے ایران کے خلاف پابندیوں کے بہانے میں منشیات کے خلاف جنگ میں اپنے کچھ فرائض کو کم یا معطل کردیئے ہیں۔

یہ بات امیر عباس لطفی نے بدھ کے روز ارنا  کے نمائندے کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ مغربی ممالک نے ایران کے خلاف پابندیوں کے بہانے میں منشیات کے خلاف جنگ میں اپنے کچھ فرائض کو کم یا معطل کردیئے ہیں اور یہ اقدام منشیات کے خلاف جنگ میں ایران کے پختہ عزم میں رکاوٹ نہیں بنے گا۔

لطفی نے کہا کہ ایران نے عالمی اور اخلاقی نقطہ نظر سے منشیات کے خلاف جنگ کو ایجنڈے میں رکھ کر منشیات کے خلاف جنگ میں اہم اقدامات اٹھائے ہیں اسی لیے انسداد منشیات کے دفتر اور اقوام متحدہ کے بیشتر ایگزیکٹوز نے ایران کو منشیات کے خلاف عالمی جنگ کا علمبردار قرار دیا ہے کیونکہ دنیا میں منشیات کی 70فیصد ضبطگی ایران سے متعلق ہے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال میں ایران میں 950 ٹن سے زائد منشیات کو برآمد کرلیا گیا ہے جو منشیات کے خلاف جنگ کی تاریخ میں اس کی کوئی مثال نہیں ہے۔ اگرچہ اس راستے میں 3880 سے زیادہ پولیس اور سیکورٹی فورسز شہید اور 12 ہزار اور 500 افراد زخمی ہوگئیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 0 =