افغانستان سے دوستانہ تعلقات کی مضبوطی انتہائی اہم ہے: ایرانی اسپیکر

تہران، ارنا- ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے افغانستان کے ایوان نمائندگان کے چیئرمین سے ایک ٹیلی فونک رابطہ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے تہران اور کابل کے درمیان دوستانہ تعلقات کی مضبوطی کی اہمیت پر زور دیا۔

تفصیلات کے مطابق، "میر رحمان رحمانی" نے آج بروز پیر کو "محمد باقر قالیباف" سے ٹیلی فونک رابطہ کرتے ہوئے ان سے علاقائی تبدیلیوں اور باہمی تعلقات سے متعلق بات چیت کی۔

اس موقع پر ایرانی اسپیکر نے دونوں ملکوں کے پارلیمانی تعلقات کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ایران اور افغانستان کے دوستانہ تعلقات کی مضبوطی انتہائی اہم ہے۔

قالیباف نے اس امید کا اظہار کردیا کہ تمام شعبوں میں دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

ایرانی اسپیکر نے مشترکہ سرحدوں میں سلامتی کی تقویت کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ  اسلامی جمہوریہ ایران اور افغانستان کے درمیان قریبی تعاون سے منشیات، دہشتگردی اور علاقے میں عدم استحکام پھیلانے کیلئے ثالثی ملکوں کی مداخلت جیسے خطروں کا مقابلہ کرنے کیلئے اقدامات اٹھا سکتے ہیں۔

قالیباف نے افغانستان کے حالیہ دہشتگردانہ حملے کے نتیجے میں درجنون افغان شہریوں کی شہادت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے افغان حکومت اور عوام سے تعزیت کا اظہار کر دیا۔

در این اثنا افغانستان کے ایوان نمائندگان کے چیئرمین نے قالیباف کو ایرانی اسپیکر کے عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ افغان پارلیمنٹ تمام شعبوں بشمول سیاسی، ثقافتی، اقتصادی کے میدان باہمی تعلقات کی مضبوطی اور تقویت کیلئے تیار ہے۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے تاریخی تعلقات پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ افغان سینیٹ ایرانی پارلیمنٹ سے دوستانہ تعلقات کا سلسلہ جاری رکھنے کا خیر مقدم کرتا ہے۔

**9467

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 3 =