جنوبی کوریا کے ذائقہ دار معدنی پانی میں ایرانی ٹیکنالوجی کا استعمال

تہران، ارنا – ایک علم پر مبنی ایرانی کمپنی نے پانی میں گھلنشیل چربی کی ٹیکنالوجی کو جنوبی کوریا کی ایک کمپنی کو فروخت کی ہے جس وقت میں جو اس وقت ملک میں ذائقہ دار معدنی پانی پیدا کرنے کے لئے استعمال ہورہی ہے۔

نینو ٹکنالوجی کی ترقی کے خصوصی ہیڈ کوارٹر کے مطابق علم پر مبنی کمپنی ' اکسیر رویان طبیعت کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ایک ممبر 'علیرضا نعیمی نے کہا کہ جنوبی کوریا کے ری سائیکلنگ کے شعبے میں ایک منصوبے کی وضاحت کے لئے جنوبی کوریا کے دورے کے دوران ہم نے محسوس کیا کہ جنوبی کوریا کا ایک سرمایہ کاری گروپ کھانے کی صنعت میں استعمال کیلیے پانی میں گھلنشیل چربی کی ٹیکنالوجی کی تلاش کر رہا ہے اسی لیے ہم نے ایران واپس آنے کے بعد اس ٹیکنالوجی کے فروغ پو کام کیا اور اور آخر کار کوریا کی مطلوبہ ٹیکنالوجی کی فراہمی میں کامیاب ہوگئے۔

انہوں نےکہا کہ جنوبی کوریا کے ری سائیکلنگ کے شعبے میں ایک منصوبے کی وضاحت کے لئے جنوبی کوریا کے دورے کے دوران ہم نے محسوس کیا کہ جنوبی کوریا کا ایک سرمایہ کاری گروپ کھانے کی صنعت میں استعمال کیلیے پانی میں گھلنشیل چربی کی ٹیکنالوجی کی تلاش کر رہا ہے، ایران واپس آنے کے بعد ہم نے اس ٹکنالوجی کے ساتھ کام کیا اور آخر کار کوریا کی مطلوبہ ٹیکنالوجی کی فراہمی میں کامیاب ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ آخر کار اس ٹیکنالوجی کو جنوبی کوریا کی ایک کمپنی کو فروخت کیا گیا۔ اس ٹیکنالوجی کو سپلیمنٹس اور کھانے میں استعمال کیا جاتا ہے۔

نعیمی نے کہا کہ فی الحال جنوبی کوریا میں اس ٹیکنالوجی کے استعمال کے ساتھ اومیگا 6 اور مفید فیٹی ایسڈ پانی میں تحلیل ہوجاتے ہیں اور ذائقہ دار معدنی پانی تیار کیا جاتا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 10 =