اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کیخلاف مقابلہ کرے: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے امریکی ہم منصب کے گزشتہ دوسال پہلے کے ٹوئٹر پیغام کا اڈیٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کیخلاف مقابلہ کرے۔

"محمد جواد ظریف" نے 27 جون 2018ء میں امریکی وزیر خارجہ "مائیک پمپیو" کیجانب سے ایران مخالف بیان کی تصویر کو شیئر کرتے ہوئے متشابہ جملوں سے امریکی عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ "کچھ لوگ نہیں سوچتے ہیں کہ سیہ فام لوگوں کی جان کی قدر و قیمت ہے، ہم لوگوں میں سے جو سیہ فام لوگوں کی زندگی کی اہمیت دیتے ہیں کو جاننا ہوگا کہ اب وہ وقت آگیا ہے کہ دنیا نسل پرستی کیخلاف مقابلہ کرے۔

ٹویٹ سے منسلک تصویر میں ابتدائی متن کا ترجمہ اور 30 مئی 2020ء میں امریکی حالیہ مظاہروں کے رد عمل میں ایرانی محکمہ خارجہ کے بیان درج ذیل ہیں؛

امریکی حکومت اپنے شہریوں کے وسائل کو ضائع کررہی ہے۔ خواہ وہ ایشیاء ، افریقہ یا لاطینی امریکہ میں اس کی مہم جوئی ہو، لاتعداد آمروں کی حمایت ہو یا اس کے جوہری ہتھیاروں کی مہنگی ترقی کے عزائم ، یہ سب کچھ صرف امریکی عوام کے دکھوں میں اضافہ کرتا ہے؛ جیسا کہ میں نے پہلے کہا تھا یہ کوئی حیرت کی بات نہیں ہے کہ امریکہ میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے، امریکی عوام چاہتے ہیں کہ ان کے حکام عوام کو بھی ملک کی دولت میں حصہ لیں اور ان کی ضروریات کو پورا کریں۔

 ایرانی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ ہم مظاہرین کو دبانے، قید کرنے اور امریکی عوام کی مایوسی کی تردید میں حکومت کی غیر موثر حکمت عملی کی مذمت کرتے ہیں؛ امریکی عوام، نسل پرستی، بدعنوانی، ناانصافی اور اپنے حکام کی نااہلی سے تنگ آچکے ہیں اور دنیا ان کی آواز کو سن رہی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 7 =