مسلمانوں کے مقدس مقامات کی بے حرمتی صہیونیت کی سازش ہے

اسلام آباد، ارنا- پاکستان میں قائم اسلامی جمہوریہ کے سفارتخانے نے کہا ہے کہ مسلمانوں کے مقدس مقامات کی بے حرمتی ایک گھناؤنا جرم ہے جو اسلام دشمن عناصر بالخصوص صہیونیت کیجانب سے منصوبہ بندی کی گئی ہے اور اس کا مقصد اسلامی فرقوں کے پیروکاروں کے درمیان افراتفری ڈالنا ہے جس پر چوکس رہنا ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق، اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے نے سنی برادری کے مقدس مکانات کی تباہی اور اس میں ملوث اسلامی جمہوریہ ایران سے متعلق شائع شدہ من گھرٹ اخبار کا سختی سے تردید کرتے ہوئے اس کی شدید مذمت کی۔

پاکستان میں قائم اسلامی جمہوریہ ایران کے سفارتخانے کے بیان میں کہا گیا ہے کہ بلاشبہ اس طرح کی جعلی خبروں کی اشاعت اسلامی مسلک کے پیروکاروں میں تفریق پیدا کرنے، عوامی جذبات کو اکسانے اور مسلمانوں کے جذبات کو نقصان پہنچانے کی ایک کوشش ہے اور یہ صرف بین الاقوامی صہیونیت اور اسلام دشمنوں کے مفادات کو فراہم کرتا ہے۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ مقدس مکانات کی تباہی اور مسلم برادری سے تعلق رکھنے والے مقبروں کی بے حرمتی کا اسلام میں کوئی جگہ نہیں ہے اور اس طرح کے حادثات میں ملوث افراد یقینا الہامی مذاہب کو نہیں سمجھتے ہیں اور ان کو اللہ رب العزت کے سامنے جوابدہ ہونا ہوگا۔

بیان میں صحافیوں اور میڈیا والوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ اپنے میڈیا مشن اور ذمہ داری کے مطابق کسی بھی طرح کی افواہوں اور من گھرٹ خبروں کی اشاعت سے باز رہیں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ان دنوں پاکستان میں کچھ میڈیا اور سوشل نیٹ ورکس میں تصاویر اور ویڈیوز گردش کی جارہی ہیں اور اس جعلی منظرنامے کے پیچھے ایجنٹ، شام میں ایک سنی معزز شخصیت کے مقبرے کی تباہی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے اسلامی فرقے کے پیروکاروں کو تقسیم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 6 =