کسی ملک کیجانب سے ملاحوں کی سیکورٹی کو کوئی خطرہ نہیں ہونا چاہئے

تہران، ارنا - ایرانی پورٹس اینڈ شپنگ اتھارٹی کے دائریکٹر جنرل نے کہا ہے کہ امریکہ کے ایران مخالف مواقف اور امریکہ کیجانب سے ایرانی بحری اور ملاحوں کو دہمکی دینے پر احتجاج کا اعلان کرتے ہوئے امریکی اقدام کو تجارتی قوانین ، بین الاقوامی قانون اور ٹریڈ یونین کے قوانین کے خلاف قرار دیا۔

یہ بات محمد راستاد نے بین الاقوامی میری ٹائم آرگنائزیشن (آئی ایم او) کے سکریٹری جنرل کیتاک لیم کے ساتھ ایک ویڈیو کانفرنس میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ کسی بھی ملک کے ذریعہ ملاحوں کی حفاظت کو کوئی خطرہ نہیں ہونا چاہئے۔

راستاد نے  پورٹ اور سمندری  شعبے میں امریکیوں کی طرف سے دی جانے والی دھمکیوں پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے اس بین الاقوامی سمندری تنظیم کی جانب سے قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ تمام بین الاقوامی فورمز جیسے آئی ایم او اور جی 20نے عالمی تجارت خصوصا بنیادی سامان، خوراک اور ادویات کی نقل و حمل میں آسانی پیدا کرنے پر زور دیا ہے۔

راستاد نے کہا کہ ایرانی بحریہ، بحریہ کے صارفین اور وہ بحری جہازوں جو ایرانی بندرگاہوں میں اتارنے اور لوڈ کرنے کے لیے آتے ہیں، کو امریکہ کی جانب سے دہمکی دی جا رہی ہے۔

کیتاک لیم نے کرونا وائرس کے پھیلنے کے دوران ایرانی پورٹس اینڈ شپنگ اتھارٹی کے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ میں بین الاقوامی میری ٹائم آرگنائزیشن کی قانونی انتظامیہ سے مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ ایران کے خلاف امریکی دھمکیوں کے مسئلے کو ہر ممکن حد تک حل کرے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 2 =