ایران کی چین کی اندرونی مسائل میں غیرملکی مداخلت کی مذمت

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے چین کی اندرونی مسائل میں غیرملکی مداخلت کی مذمت کی۔

سید عباس موسوی نے کہا ہے کہ دوسرے ممالک کے مسائل میں عدم مداخلہ، علاقائی سالمیت کو برقرار رکھنا اور دنیا کے ممالک کی قومی خودمختاری پر احترام کرنا اسلامی جمہوریہ ایران کا واضح اور غیر تبدیل شدہ خارجہ پالیسی ہیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا ہے کہ ایران "متحدہ چین" کے اصول کے احترام کی اہمیت کی مبنی پر اس کے اندرونی معاملات میں کسی بھی غیر ملکی مداخلت اور اس کی خودمختاری اور علاقائی سالمیت پر خدشہ کی مذمت اور ہانگ کانگ کے عوام کے استحکام ، فلاح و بہبود اور سلامتی کے لئے قانون کے نفاذ اور نظم و ضبط پر زور دے رہا ہے۔

چینی قومی کانگریس (NPC) نے کورونا وائرس کے پھیلنے کی وجہ سے تقریبا 80 دن کی تاخیر کے بعد جمعہ کی صبح بیجنگ میں اپنا کام شروع کیا۔

سخت سیکیورٹی اور صحت کے اقدامات کے درمیان شروع ہونے والی اس نشست میں کمیونسٹ پارٹی اور چینی حکومت کے رہنماؤں بالخصوص اس ملک کے صدر "شی جین پینگ" نے شرکت کی۔

چین کے قومی کانگریس نے چین کے شہری قانون کے مسودے اور قانونی نظام کے قیام کے فیصلے اور ہانگ کانگ کی قومی سلامتی کے دفاع کے طریقہ کار سے متعلق دو مسودہوں کا بھی اعلان کیا۔

مغربی ممالک خاص طور پر امریکی وزیر خارجہ مائک پمپیو نے چین کے قومی کانگریس کے منصوبے پر ردعمل کا اظہار کیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 11 =