امریکی فوجی خطرے کا سایہ ایرانی آئل ٹینکروں کے سر پر کھڑا ہوگیا ہے: وینزویلا

تہران، ارنا- ایک ایسے وقت جب ایرانی آئل ٹینکرز وینزویلا کے پانیوں کے قریب پہنچنے والے ہیں، تو اقوام متحدہ میں تعنیات وینزویلا کے مستقل مندوب نے اس تنظیم کے سربراہ اور سلامتی کونسل کے سربراہ کے نام میں ایک خط میں ان کو امریکہ کیجانب سے ایرانی آئل ٹینکروں پر حملے کے خطرے سے خبردار کیا ہے۔

"ساموئل مونکادا" نے آج بروز ہفتے کو ایک ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ امریکی فوجی خطرے کا سایہ ایرانی آئل ٹینکروں کے سر پر کھڑا ہوگیا ہے اور انہوں نے اس حوالے سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو ایک انتباہی خط لکھا ہے۔

 خط میں وینزویلا کی حکومت نے ایرانی آئل ٹینکروں پر امریکی فوجی حملے کا خبردار کیا ہے۔

مونکادا نے اس خط میں کہا گیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ انتظامیہ کی یکطرفہ پابندیوں کے باعث وینزویلا کو خام تیل کو بہتر بنانے اور اسے ایندھن میں تبدیل کرنے کیلئے خام مال کے حصول سے روک دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ  امریکی عہدیداروں نے بار بار وینزویلا کے ایندھن کی فراہمی کو بند کرنے سے متعلق کمپنیوں پر دباؤ ڈالنے کا اعتراف کیا ہے۔

 انہوں نے امریکہ کیجانب سے ایران اور وینزویلا کیخلاف لگائی گئی سخت پابندیوں اور زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کی پالیسی کا ذکر کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی اقدامات بین الاقوامی حقوق کی کھلی خلاف ورزی اور آزاد ملکوں کے معاملات میں مداخلت ہے۔

مونکادا نے اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ٹرمپ انتظامیہ کی دشمنانہ اور مجرمانہ پالیسیوں کو جلد از جلد ختم کرنے کیلئے ضروری اقدامات کریں تاکہ امن، سلامتی اور استحکام خطے میں امریکی تناؤ کی جگہ لے سکے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر مملکت نے امیر قطر کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران گفتکو کرتے ہوئے کہا کہ اگر امریکہ کیریبین یا دنیا کے کسی اور کونے میں ایرانی آئل ٹینکروں کی راہ میں رکاوٹیں حائل کرے تو ہم اس کا جوابی کاروائی کریں گے۔

صدر روحانی نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کبھی کسی کشیدگی کا آغاز ہی نہیں کیا ہے لیکن ہمیں ہمیشہ اپنی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کا دفاع کرنے اور اپنے قومی مفادات کی خدمت کا جائز حق حاصل ہے  اور ہم امید کرتے ہیں کہ امریکہ غلط اقدام نہیں اٹھائے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 2 =