رہبر انقلاب کی تقریر فلسطینی مسئلے کو دنیا کے سرفہرست معاملے میں بدل کرے گی: ایرانی مندوب

نیویارک، ارنا – اقوام متحدہ میں تعینات ایرانی مندوب نے کہا ہے کہ یوم القدس کے موقع پر ایرانی سپریم لیڈر کا خطاب مسئلہ فلسطین کو دنیا کے سرفہرست معاملے میں بدل کرے گی۔

یہ بات مجید تخت روانچی نے جمعرات کے روز ارنا کے نمائندے کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ فلسطین کیخلاف امریکہ اور صیہونی حکومت کی کاوشوں کے باوجود یوم القدس کے موقع پر ایرانی سپریم لیڈر کے خطاب سے ایرانی دنیا کا نمبر ون مسئلہ بن جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ اس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ فلسطینی مسئلہ اسلامی دنیا کا مسئلہ ہے اور اس کا تعلق ایک یا چند ممالک سے نہیں ہے۔

اقوام متحدہ میں ایران کے مستقل نمائندے نے کہا کہ فلسطین جہان اسلام کا اہم مسئلہ ہے اسی لیے  تمام اسلامی ممالک اس پر اہمیت دیتے ہیں اور کرونا کی وجہ سے اس سال اسرائیل کیخلاف کوئی ریلی نکلے گی لیکن لیکن قائد انقلاب اس حوالے سے یوم القدس بروز جمعہ ایک تقریر کریں گے۔

ایرانی صدر نے حالیہ دنوں میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے اس سال یوم قدس کے موقع پر اسرائیل مخالف ریلیوں میں لوگ پیدل نہیں بلکہ گاڑیوں کے ساتھ شریک ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ان ریلیوں میں شریک ہونے والے افراد اپنی گاڑیوں میں سے ہی نعرے لگاتے ہوئے جھنڈے لہراتے ہوئے گزریں گے۔

یوم قدس کے موقع پر نکالی جانے والی ریلیوں کا مقصد فلسطینیوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنا ہوتا ہے اور ہر سال ان ریلیوں میں ’اسرائیل کے خاتمے‘ کے نعرے لگانے کے ساتھ ساتھ اسرائیلی پرچم نذر آتش کیے جاتے ہیں۔

تخت روانچی نے مزید کہا کہ موجودہ امریکی حکومت فلسطینی مسئلے کو صہیونی حکومت کے نقطہ نظر سے دیکھ رہی ہے، اسی لیے امریکہ کی جانب سے کسی بھی منصوبہ فلسطینی عوام کے لئے ناقابل قبول ہے کیونکہ امریکہ صہیونی حکومت کے مفادات کو مد نظر رکھتا ہے، یہ عالمی برادری کے نقطہ نظر سے بھی ناقابل قبول ہے۔

انہوں نے یوم القدس کی اہمیت کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ عالم اسلام اور  آزادی پسندوں کا اتحاد فلسطینی عوام  کی حمایت اور ان کے حقوق کے دفاع کے لیے اہم کردار ادا کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ جلد از جلد فلسطینی ارمانوں کے حصول کے لئے ان کوششوں کو جاری رکھنا چاہئے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@     

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 0 =