قائد اسلامی انقلاب کے بیانات عالمی یوم القدس کے ارمانوں کا پورا ہونے کی طرف تاریخی قدم ہے

بغداد، ارنا- عراق میں تعینات فلسطینی سفیر نے عالمی یوم القدس کے موقع پر قائد اسلامی انقلاب کی  اہم اور تاریخی تقریر پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کے بیانات کو یوم القدس کے ارمانوں کا پورا ہونے کی طرف ایک تاریخی قدم قرار دے دیا۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بانی اسلامی انقلاب امام خمینی (رہ) کی خواست کے مطابق اس طرح کے اقدامات کا عملی جامہ پہنانا ہوگا۔

پان خیالات کا اظہار "احمد العقل" نے منگل کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امام خمینی (رہ) کیجانب سے عالمی یوم القدس کو منانے کا مقصد القدس الشریف کی آزادی کیلئے ایک آپریشنل منصوبہ مرتب کرنا تھا۔

فلسطینی سفیر نے اس بات پر زور دیا کہ خطے میں نئی صورتحال کے پیش نظر، توقع کی جارہی ہے کہ مسئلہ فلسطین سے متعلق امام خمینی (رہ) کی سوچ پہلے کے مقابلے میں زیادہ عملی سطح پر پہنچ جائے گی۔

انہوں نے عالمی یوم القدس میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے ریلیوں کے عدم انعقاد کا ذکر کیا اور اسی مناسبت سے ایرانی سپریم لیڈر کی اہم اور تاریخی تقریر پر تبصرہ کرتے ہوئے اس امید کا  اظہار کردیا کہ ان کے بیانات سے اسلامی ممالک کے درمیان یکجہتی اور اتحاد کا فروغ ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ دشمن عناصر کی خواست یہ ہے کہ اسلامی ممالک کے درمیان یکجہتی اور اتحاد برقرار نہ ہوجائے اور وہ اپنے اس مقصد تک پہنچنے کیلئے کسی بھی کوشش سے دریغ نہیں کریں گے۔

واضح رہے کہ ایران میں عالمی یوم القدس کے منصوبوں کا نقطہ عروج قائد اسلامی انقلاب حضرت آیت اللہ خامنہ ای کی اہم اور تاریخی تقریر ہے جس میں وہ القدس اور فلسطین سمیت علاقے اور دنیا میں حالیہ تبدیلیوں پر بات کریں گے اور اس کے بعد مزاحمت کی تاریخ میں نئے ڈائیلاگ کا اہم موڑ بن کر سامنے آئے گا۔

ایرانی سپریم لیڈر جمعہ کے روز مطابق عالمی یوم القدس میں مقامی وقت کے مطابق دو پہرکے 12 بجے میں دنیا بالخصوص دنیائے اسلام کے عوام سے تقریر کریں گے؛ اس تقریر لائیو طور پر براہ راست ٹیلی ویژن اور ریڈیو پر نشر کی جائے گی۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ بانی اسلامی انقلاب حضرت امام خمینی (رہ) نے رمضان المبارک کے آخری جمعے کو عالمی یوم قدس قرار دے دیا جس کا مقصد فلسطین کی مظلوم قوم کا دفاع اور صیہونی حکومت کے جرائم کی مذمت کرنا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 5 =