عالمی برادری کو "عالمی جمہوریت" تشکیل دینے کی ضرورت ہے: ایران

تہران، ارنا - ایران کی خارجہ تعلقات اسٹریٹجک کونسل کے چیئرمین نے عالمی تعلقات میں چند فریقی پن کو موجودہ شکل میں غیرموثر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی برادری کو "عالمی جمہوریت" تشکیل دینے کی ضرورت ہے۔

یہ بات "سید کمال خرازی" نے منگل کے روز پیس فاؤنڈیشن کے راہنماؤں کے تیسرے سالانہ اجلاس جو ورچوئل کے طورپر انعقاد کیا گیا، میں کہی۔
انہوں نے امریکی یک طرفہ اقدامات کے تباہ کن نتائج، چلینجوں اور عالمی بحرانوں کی تشدید کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ایک فریقی پن عالمی برادری کے لئے ایک مہلک زہر ہے اور موجودہ عالمی صورتحال کی پیچیدگی میں اضافہ کرتا ہے۔
خرازی نے کہا کہ موجودہ چند فریقی پن کی ناکارہ ہونا امریکی حکومت کے سامراجی رویے اور دوسروں پر اپنا تسلط اور یک طرفہ نقطہ نظر مسلط کرنے کی کوشش کرتی ہے۔
انہوں نے تجویز کیا کہ موجودہ عالمی نظم کی کمزوریوں اور ناکافیوں سے ایک "نیا کثیر الجہتی" نظام تشکیل دینے اور ایک قسم کا "نیا عالمی یکجہتی" وضع کرنے کی ضرورت کو ظاہر ہوتا ہے جس میں تمام ممالک بالخصوص جنوب کی آوازیں سنائی دیتی ہیں اور ابھرتی ہوئی کردار اپنے مقام کے مطابق عالمی حکمرانی میں حصہ لیتے ہیں، دوسرے لفظوں میں ، ہمیں عالمی جمہوریت کی ضرورت ہے۔
انہوں نے اقوام متحدہ کے سربراہ اور متعدد حکومتوں کی طرف سے تنازعات کے خاتمے اور ایران جیسے ممالک پر پابندیوں کو ختم کرنے پر زور دیا تاکہ تمام ممالک کرونا وائرس سے وبائی امراض کے مقابلہ کرنے کے لئے ادویات اور صحت کے سازوسامان کے متحمل ہونے دیں۔
انہوں نے امریکہ سے عالمی ادارہ صحت ، بین الاقوامی مالیاتی فنڈ اور عالمی بینک جیسی بین الاقوامی تنظیموں میں مداخلت بند کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی مداخلت عالمی تنظیموں پر اعتماد کو خطرے میں ڈالتی ہے۔
ایران کی خارجہ تعلقات اسٹریٹجک کونسل کے چیئرمین نے امریکی دباؤ کے تحت آئی ایم ایف کی تاخیر کی یاد دلاتے ہوئے کہا کہ ایران نے کرونا وائرس وبائی مرض سے نمٹنے کے لئے 5 بلین ڈالر کے قرض کی ایران کی درخواست کا جواب دیا۔
پیس فاؤنڈیشن کے رہنماؤں نے منگل کے روز ایک آن لائن کانفرنس کا انعقاد کیا جس میں ایران کی خارجہ تعلقات اسٹریٹجک کونسل کے چیئرمین اور وزرائے خارجہ سمیت 37 سیاسی شخصیات نے شرکت کی۔
 فرانسیسی کے سابق وزیر خارجہ ژان پیئر رافرین نے اس اجلاس کی قیادت کی۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 0 =