عالمی ادارہ صحت حمایت کا مستحق ہے جرمانے کا نہیں: ایران

تہران، ارنا- ایرانی وزیر صحت نے عالمگیر مرض کرونا وائرس کی روک تھام سے متعلق اجتماعی تعاون اور ہم آہنگی لانے میں عالمی ادارہ صحت کے تعمیری کردار کو سراہا اور کہا کہ اس ادارہ حمایت کا مستحق ہے نہ کہ بعض ممالک اس پر جرمانہ عائد کریں۔

ان خیالات کا اظہار "سعید نمکی" نے پیر کے روز صحت سے متعلق 73 ویں سالانہ اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا جو بطور ویڈیو کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔

انہوں نے اس وبائی بیماری پر قابو پانے کیلئے عالمی یکجہتی اور بین الاقوامی تعاون کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے مناسب، منصفانہ، سستی قیمت اور بروقت پر ادویات اور ویکسین تک رسائی کی ضرورت پرزور دیا۔

نمکی نے کہا کہ کوئی بھی عمل یا پالیسی جو صحت کے شعبے میں حکومتوں کے مابین تعاون میں رکاوٹ حائل کرے وہ غیر ذمہ دارانہ اور غیر انسانی ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ یقینا، یکطرفہ پابندیاں غیر انسانی ہیں اور یک بہت بڑی رکاوٹ بھی جو دکھ اور درد کے سبب بنتی ہیں۔

نمکی نے کہا کہ امریکہ کو ایرانی عوام کی زندگی کو خطرے میں ڈالنے کیلئے جوابدہ ہونا ہوگا۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر صحت نے عالمی ادارہ صحت کے حکام سے ویڈیو کانفرنس کے بعد کہا ہے کہ ہم نے عالمی ادارہ صحت سے مطالبہ کیا کہ وہ اس مشکل صورتحال میں جب ہمیں ویکسن اور ادویات کی تیاری میں مشکلات کا سامنا ہے، کے موقع پر ایران اور دوسرے ملکوں کیخلاف عائد پابندیوں کو اٹھانے میں کردار ادا کرے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
5 + 8 =