فلسطین میں کوئی بھی صدی کی ڈیل کو نہیں مانتا ہے

ماسکو، ارنا- روس میں تعینات فلسطینی سفیر نے کہا ہے کہ ڈیل آف سنچری منصوبے کو شکست کا سامنا ہوگا اور فلسطین میں کوئی بھی اس منصوبے کو نہیں مانے گا۔

ان خیالات کا اظہار "عبدالحافظ نوفال" نے پیر کے روز روس میں تعنیات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر "کاظم جلالی" سے ویڈیو کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے عالمی یوم القدس کے تعین کیلئے بانی اسلامی انقلاب حضرت امام خمینی (رہ) کا شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ بیت المقدس؛ ہماری لئے ایک مقدس شہر ہے لیکن اب ناجائز صہیونی ریاست کرونا وائرس کی وجہ سے رونما ہونے والی صورتحال کا غلط فائدہ اٹھاکر اپنے ناپاک مقاصد پہنچنے اور اس شہر کو ناجائز صہیونی ریاست کا دارالحکومت قرار دینے کی کوشش کر رہا ہے۔

نوفال نے اس حوالے سے ناجائز صہیونی ریاست کے اقدامات کا تسلسل پر زور دیتے ہوئے کہا کہ وہ بیت المقدس کو عرب آبادی سے خالی کرنے کی کوشش کرتے ہیں لہذا ہمیں فلسطینی عوام کے حقوق کے دفاع کیلئے ایران کی مدد ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ کا کہنا ہے کہ بیت المقدس، ناجائر صیونی ریاست کا دارالحکومت ہے لیکن ان کا یہ دعوی بین الاقوامی قوانین کیخلاف ورزی ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کے صدر کو کوئی ایسا فلسطینی نہیں ملے گا جو اس دعوے کو قبول کرے۔

نوفال نے مزید کہا کہ فلسطینی گروپوں کے مابین تفریق ختم ہونی چاہئے اور بیت المقدس اور فلسطین کو عربوں کی حمایت پر انحصار کرنا چاہئے؛ ہمیں اس شہر کو یہودی بنانے کی کوششوں کا مقابلہ کرنا چاہئے۔

فلسطینی سفیر نے کہا کہ ہم فلسطین سے متعلق امریکی پالیسی کی مخالفت کرتے ہیں اور روس سمیت متعدد ممالک  بھی اس پالیسی کو قبول نہیں کرتے اور مشرق وسطی کے چار بین الاقوامی ثالثوں کو بھی اس حقیقت پر توجہ دینی ہوگی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 6 =