ایران اور پاکستان کا سرحدی تبادلے کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ

اسلام آباد، ارنا – پاکستان میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر "سید محمد علی حسینی" نے چیمبر آف کامرس، صنعتوں ، کانوں اور زراعت کے عہدیداروں کے ساتھ ایک ورچوئل نشست میں کرونا وائرس کے پھیلنے کے بعد دونوں ممالک کے درمیان تجارت اور سرحدی تبادلے کی تازہ ترین صورتحال کا جائزہ لیا۔

فریقیں نے کرونا پھیلنے کی وجہ سے موجودہ صورتحال میں پاک ایران سرحدوں کی تازہ ترین پیشرفت ، مشترکہ تجارتی سرگرمیوں اور سرحدی تبادلے پر تبادلہ خیال کیا۔
ایرانی سفیر نے کرونا وائرس کے خلاف جنگ سے متعلق پاکستان کی تازہ ترین صورتحال کا حوالہ دیتے ہوئے پاکستانی حکام کے ساتھ سرحدی ناکہ بندی اٹھانے اور سرحدی علاقوں میں تجارت اور راہداری کی سہولت کے لئے ہیلتھ پروٹوکول کو آگے بڑھانے کے لئے سفارت خانے کی کوششوں کی وضاحت کی۔
اگر پاکستان صورتحال کو معمول بنا کر زیادہ برآمد اور ٹرانزٹ کارگو قبول کرتا ہے تو ایرانی کسٹمز ہیلتھ پروٹوکول پر مکمل طور پر عمل درآمد کرنے، خدمات کو تیز تر کرنے اور فراہم کرنے کے لئے 24 گھنٹے کام کرنے پر تیار ہے۔
مارچ کے آخر سے ایران اور پاکستان کے درمیان سرحدوں کو کرونا وائرس پھیلنے کے نتیجے میں بند کردیا گیا ہے جس کی وجہ سے سرحد کے پیچھے بڑی تعداد میں ٹرک معطل ہوگئے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 1 =