مسلمانوں کا پہلا قبلہ برائے فروخت نہیں ہے: ایرانی سفیر

تہران، ارنا- دمشق میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ مسلمانوں کا پہلا قبلہ ایسی سرزمین نہیں ہے جس کو بین الاقوامی نیلامی میں فروخت کی جا سکے اور القدس کا عالمی دن اس مسئلے کی طرف مسلمانوں کی توجہ کو مبذول کروانا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "جواد ترک آبادی" نے ہفتے کے روز دمشق کے مضافات میں واقع "جرمانا" کیمپ میں یوم نکبہ کی 72 ویں سالگرہ کی مناسبت سے منعقدہ ایک تقریب کے دوران، گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ یوم القدس کے انعقاد کا مقصد مسلمانوں کی توجہ مبذول کروانا اور انہیں اپنے پہلے قبلہ سے جوڑنے کی رہنمائی کرنا اور مسلمانوں کے پہلے قبلہ کو بین الاقوامی نیلامی سے دور رکھنا ہے تا کہ صہیونی ریاست اور اس کے حامی اس پر قبضہ نہ کر سکیں۔

ترک آبادی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کو پہلے ہی سے فلسطینی عوام کے جائز حقوق کی حمایت کیلئے معاشی ناکہ بندی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

اس موقع پر صہیونی ریاست کیخلاف مزاحمتی فرنٹ کی حمایت کی اعلی کمیٹی کے سربراہ "محمد مصطفی میرو" نے مقبوضہ فلسطین پر صہیونیوں کے قبضے کے خاتمے کیلئے اقدامات اٹھانے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے علاقے میں امریکہ اور ناجائر صہیونی ریاست کے مشترکہ منصوبوں کیخلاف مشترکہ اقدامات اٹھانے اور یوم القدس کو زندہ رکھنے اور فلسطینی مسئلہ کی طرف توجہ دینے کی کوششوں کرنے کا مطالبہ کیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 0 =