ایران کی آزاد قوموں اور ریاستوں کو فلسطینی عوام کی موثر حمایت کی دعوت

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ نے ناجائز صہیونی ریاست کے قیام کی سالگرہ اور یوم نکبہ کے موقع پر کہا ہے کہ صہیونی ریاست نے سات دہائیوں سے زائد ہے کہ فلسطینی سرزمین کے حقیقی مالکان کیخلاف جارحیت، خصمانہ اقدامات اور سنگین جرائم کا آغاز کیا ہے۔

ایرانی محکمہ خارجہ کے بیان میں کہا گیا ہے کہ 14 مئی 1948 کو سرزمین فلسطین میں اسلام اور دنیا کی تاریخ کا ایک انتہائی تکلیف دہ واقعہ دیکھنے میں آیا اور اس وقت سے اب تک، اس سرزمین کے عوام نے سکون اور راحت نہیں دیکھا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ 72 سال پچھلے ٹھیک اسی دن کے موقع پر صیہونی تارکین وطن نے شیطانی اور نسل پرستانہ نظریات اور افکار کے بہانے سے فلسطینیوں عوام بشمول مرد اور خواتین، جوان اور بوڑھے  اورمعصوم بچوں کو قتل کرکے ان کو اپنے ہی گھرکو چھوڑنے کا مجبور کیا اور اسی وقت سے اب تک صہیونی نکبہ نے فلسطین کی سرزمین پر حکمرانی کی اور مغربی ایشین خطے میں پھیل گیا۔

 صہیونی حکومت نے سات دہائیوں سے زیادہ کے قبضے کے دوران، جارحانہ اور خصمانہ اقدامات اٹھاتے ہوئے اس سرزمین کے اصل مالکان کیخلاف سنگین جرائم کیے اور پھر صہیونی بستیوں کو توسیع اور مزید فلسطینیوں کو بے گھر کیا؛ ساتھ ہی مسجد اقصی کی بے حرمتی کی؛ قدس اور مغربی کنارے میں یہودیوں کی آبادی میں اضافہ، غزہ کی پٹی کی مسلسل ناکه بندی، مقبوضہ گولان پہاڑیوں کے غیرقانونی قبضے اور مغربی کنارے کے بڑے حصوں کو الحاق کرنے کی کوششوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے اپنے اس مجرمانہ پالیسی پر ڈٹ کر کھڑا ہے۔

 اسلامی جمہوریہ ایران، فلسطینی عوام کے ارمانوں کیساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے آزادی کی راہ میں شہید ہونے والوں اور مسلمانوں کے سب سے پہلہ قبلہ القدس الشریف کا احترام کرتے ہوئے  صدی کی ڈیل جیسے شرمناک معاہدوں کا مسترد کرتا ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران ایک بار پھر القدس الشریف اور فلسطینی سرزمین پر قبضے کے اختتام، فلسطینی پناہ گزینوں کی اپنی وطن واپسی اور فلسطین کے مستقبل کا تعین کیلئے استصواب رائے کا انعقاد جس میں تمام فلسطینی عوام بشمول مسلمان، عیسائی اور یہودی شریک ہوں اور فلسطین کی آزاد سرزمین کے قیام جس کا دارالحکومت بیت المقدس ہو، کے حوالے سے بین الاقوامی تنظیموں بالخصوص اقوام متحدہ کی ذمہ داریوں پر زور دیتا ہے۔

 ایرانی محکمہ خارجہ نے آزادی کی راہ میں فلسطینی عوام کی جد و جہد کے سامنے ایران کے موقف کی یاد دہانی کراتے ہوئے کہا کہ فلسطینی مسئلہ دنیائے اسلام کا سب سے اہم مسئلہ ہے۔

اسلامی جمہوریہ ایران، اسلامی تعاون تنظیم اور تمام آزاد قوموں اور ریاستوں سے فلسطینی عوام کی موثر حمایت کی دعوت دیتا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 9 =