ایران پر اسلحہ کی پابندی میں توسیع کی کوئی وجہ نہیں ہے: روس

نیویارک، ارنا – اقوام متحدہ میں روس کے مستقل مندوب نے امریکہ کے ایران پر اسلحہ کی پابندی میں توسیع کے دعوے کو مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس اقدام کی کوئی وجہ نہیں ہے۔

یہ بات "واسیلی نبنزیا" نے منگل کے روز ورچوئل پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران پر اسلحہ کی پابندی میں توسیع کی کوئی وجہ نظر نہیں آتی ہے اور اسے 18 اکتوبر خاتمہ کیا جائے گا۔
نبنزیا نے کہا کہ سنیپ بیک میکنزم سے استعمال کے لئے جوہری معاہدے میں رکن والے کی ضرورت ہے اور امریکہ گزشتہ دو سال سے پہلے اس عالمی معاہدے سے علیحدہ ہوگيا۔
یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے 8 مئی 2018 کو ایران جوہری معاہدے سے علیحدہ ہونے کی ہدایت دی اور ایران مخالف یک طرفہ غیرقانونی پابندیوں کو توسیع کردیا۔
اس دہشت گردانہ اقدام کے دو سال بعد ، امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو نے اب خود ساختہ تشریح میں دعوی کیا کہ ہم قرارداد 2231 میں شراکت دار ہیں اور اسے ایران کے اسلحہ پر پابندی میں توسیع کے لئے سنیپ بیک میکنزم سے استعمال کرنے کا حق ہے۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 2 =