ایران کی امریکی قیدیوں کے تبادلہ میں تاخیر کے دعووں کی تردید

تہران، ارنا- ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے ایران کیجانب سے امریکی قیدیوں کے تبادلہ میں تاخیر سے متعلق واشنگٹن کے دعووں کی تردید کی۔

تفصیلات کے مطابق "سید عباس موسوی" نے پیر کی رات کو ایک ٹوئٹر پیغام میں امریکی حکام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ بیکار باتیں کرنے کا خاتمہ دیں!

انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی وزیر خارجہ "محمد جواد ظریف" نے ستمبر 2018ء کو "قیدیوں کا عالمی تبادلہ" کے موضوع کو پیش کیا اور امریکہ سے مطالبہ کبا کہ امریکہ اور دیگر ملکوں کی جیلوں میں قید ایرانی شہریوں سے متعلق ذمہ دارانہ اقدامات اٹھائے۔

موسوی نے کہا کہ امریکی حکومت نے اس بات کی لاپراوائی سے ان قیدیوں کی جانوں کو خطرے میں ڈال دیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ دنیا آپ کے اقدامات کو دیکھ رہی ہے نہ کہ آپ کی باتوں کو! ہمارے ہم وطنوں کو رہا کردیں۔

واضح رہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے بھی اس سے پہلے ایران اور امریکہ کے درمیان قیدیوں کے تبادلہ سے متعلق کہا ہے کہ انہوں نے گزشتہ سال کے دوران نیویارک میں کہا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، امریکہ اور دیگر ملکوں میں امریکی دباؤ کے تحت جیل میں موجود ایرانی قیدیوں کو امریکی قیدیوں سے تبادلہ پر تیار ہے لیکن اس وقت امریکہ نے ہمارے بیانات کا جواب ہی نہیں دیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 10 =