امریکی پابندیوں نے ایران میں کرونا کے بحران کو اور بھی مہلک بنا دیا ہے: موسویان

میڈریڈ، ارنا - سابق ایرانی جوہری مذاکرات کار اور امریکی یونیورسٹی پرنسٹن کے پروفیسر نے کرونا وائرس کی عالمی دھمکی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹرمپ کو ایران مخالف پابندیوں اور زیادہ سے زیادہ دباؤ کا خاتمہ کرے کیونکہ اس پابندیوں نے ایران میں کرونا کے بحران کو اور بھی مہلک بنا دیا ہے۔

یہ بات "سید حسین موسویان" نے ہفتہ کے روز الجیریا چینل میں شائع ہونے والے اپنے مضمون میں کہی۔
انہوں نے کہا کہ اگرچہ کرونا بدستور شکار اور عالمی سطح پر لوگوں کی معاشیات کو درہم برہم کررہا ہے کچھ ممالک ، جیسے امریکہ کسی بھی دوسرے ملک کے مقابلے میں زیادہ نقصان اٹھانا پڑا ہے جس کی بڑی وجہ حکومت کی کمزوری اور منصوبہ بندی کی کمی ہے۔
موسویان نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کرونا بحران کے انتظام میں اپنی نااہلی کو نظرانداز کرتے ہوئے ایران میں کرونا متاثرین کی تعداد کو حکومت سے منسوب کرنے کی کوشش کی۔
بہت سارے سیاسی رہنماؤں ، سفارت کاروں ، دفاعی عہدیداروں ، ماہرین اور دنیا بھر کی سول سوسائٹی کی متعدد تنظیموں نے ٹرمپ انتظامیہ سے ایران کے خلاف پابندیاں ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ ایرانی حکومت کرونا کے خطرے کے خلاف اپنے سیکڑوں ہزاروں شہریوں کی جانوں کا تحفظ کرسکے۔
مگر ٹرمپ اس بحران کو "انسانی سفارت کاری" کے موقع سے فائدہ اٹھانے اور صورتحال کو چار مراحل میں تبدیل کرنے کے لئے استعمال کرسکتا ہے:
پہلا قدم: انسانی مسائل میں بینک ٹرانسفر کے لئے پابندیاں اٹھانا اور تیل کی برآمدات کا کم سے کم حصہ وصول کرنا تاکہ ایرانی حکومت کو اپنے عوام کی فوری ضروریات جیسے طبی سامان کی فراہمی کے لئے شرائط مہیا کرے۔
دوسرا مرحلہ: وہ امریکہ میں مقیم لاکھوں ایرانیوں کو قانونی خدمات فراہم کرسکتا ہے تاکہ اس وائرس سے نمٹنے کے لئے ایران میں اپنے اہل خانہ کو مالی اور طبی امداد بھیج سکیں۔
تیسرا مرحلہ: کرونا کے نتیجے میں اپنے پیاروں کے بارے میں سیکڑوں خاندانوں کی بےچینی کو کم کرنے کے لئے قیدیوں کا جامع تبادلہ۔
چوتھا مرحلہ: "انسانی سفارتکاری" کی شکل میں ٹرمپ کا آخری اقدام ایران اور امریکہ کے درمیان تعلقات کی راہ کھولنے کا ہوسکتا ہے کیونکہ تعلقات عامہ کو کھولنے سے ، ٹرمپ وائرس کے خلاف جنگ میں متعدد عوامی تعاون میں حصہ ڈال سکتے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 1 =