پابندیوں کے سائے میں ایران میں وزارت زراعت اور توانائی کے بڑے قومی منصوبوں کا افتتاح

ایلام، ارنا – ایران مخالف امریکی پابندیوں کے باوجود ایران کا ترقیاتی منصوبے یکے بعد دیگری افتتاح ہو رہے ہیں اور جمعرات کے روز ایرانی قوم نے زراعت اور پانی کی صنعت کے شعبوں میں متعدد بڑے قومی منصوبوں کے افتتاح کا مشاہدہ کیا۔

مغربی صوبے گیلان میں آبپاشی اور نکاسی آب کے نیٹ ورک اور ڈیم کے منصوبوں کے علاوہ 120 دیگر منصوبے ان منصوبوں میں شامل ہے جو آج اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی کے حکم سے افتتاح ہوتے ہیں۔

ان منصوبوں کے نفاذ کے لئے تقریبا 1600 بلین تومان خرچ کیے گئے ہیں جن منصوبوں کا نفاذ کے زرعی اور رہائشی حالات کو بہتر بنانے میں موثر کردار ادا کرے گآ۔

ایرانی صدر نے اس امید کا اظہار کیا کہ اس منصوبوں کے افتتاح سے اس سرحدی صوبے کی ترقی کا موقع پہلے سے کہیں سے زیادہ مہیا کیا جائےگا۔

ایرانی وزیر جہاد زراعت کاظم خاوازی نے کہا کہ اس صوبے کے زرعی منصوبوں کے افتتاح کے ساتھ اس شعبے میں مصنوعات کی پیداوار میں260 ہزار ٹن کا اضافہ کیا جائے گا۔

ایرانی وزیر توانائی نے اس تقریب میں کہاکہ اسلامی انقلاب کے بعد ملک میں 19 ڈیم موجود تھا اور اب ان ڈیموں کی تعداد 144 ہوگئی ہے۔

روحانی نے جو ویڈیو کانفرنس کے ذریعے صوبے ایلام کے عہدیداروں کے ساتھ ویڈیو کانفرنس میں گفتگو کر رہے تھے، تمام ایرانی ماہرین اور ملازموں کی کوششوں کی بھی تعریف کی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha