ایران کیخلاف پابندیوں کی توسیع پر امریکی شرپسندانہ کوششیں کامیاب نہیں ہوں گی 

لندن، ارنا- برطانیہ کے سابق وزیر خارجہ نے ایران پر اسلحے کی پابندی میں توسیع کے حوالے سے امریکی کوششوں کو شرپسندانہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس کے ان جیسے اقدامات سے کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا۔

ان خیالات کا اظہار "جک اسٹراو" نے بدھ کے روز ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے اس حوالے سے نیویارک ٹائمز کی رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ، اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو خام آلے کے طور پر استعمال کرتے ہوئے ایران کیخلاف اقدامات اٹھانا چاہتا ہے حالانکہ روس اور چین اس کے اس اقدام کی مخالفت کریں گے۔

جک اسٹروا کا کہنا ہے کہ امریکہ کا ارادہ ہے کہ وہ جوہری معاہدے کے یورپی فریقین کیخلاف دباؤ ڈال کر، یورپیوں سمیت ڈیموکریٹک پارٹی اور اپنے حریف جو بائیڈن کا شرمندہ کریں۔

برطانوی کے سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ لیکن امریکہ کی اس بے کار کوششوں سے کوئی نتیجہ حاصل نہیں ہوگا۔

واضح رہے کہ نیویارک ٹائمز نے اتوار کی رات (26 اپریل) کو ایران کے اسلحہ کی پابندی میں توسیع کیلئے امریکی چال کا انکشاف کیا تھا ، جسے رواں سال 18 اکتوبر سے جوہری معاہدے کے تحت اٹھایا جائے گا۔

امریکی اخبار نیو یارک ٹائمز کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو قانونی موقف تیار کر رہے ہیں جن میں کہا جائے گا کہ امریکہ ایران کیساتھ طے ہونے والے اس جوہری معاہدے کا حصہ ہے جس سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ علیحدگی کا اعلان کر چکے ہیں۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے 2018ء میں جوہری معاہدے سے علیحدہ ہوکر ایران پر دوبارہ پابندیاں عائد کر دی تھیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha