امریکہ صحت کے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کر رہا ہے: ایرانی صدر

تہران، ارنا – ایرانی صدر نے کہا ہے کہ امریکہ نے ایرانی عوام کے خلاف غیر قانونی پابندیاں سخت کردی ہیں اور اور بین الاقوامی قواعد کی خلاف ورزی کرنے کے علاوہ عالمی سطح پر صحت کے ضوابط کی بھی خلاف ورزی کی ہے۔

یہ بات ڈاکٹر حسن روحانی نے منگل کے روز جنوبی افریقی صدر 'سیریل رامافوسا' کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ نے ایران کے خلاف عائد پابندیوں کو اضافہ کردیا ہے اور ساتھ ہی عالمی سطح پر صحت کے ضوابط کی خلاف ورزی اور ایران کو صحت اور علاج کے شعبے میں سامان کے تبادلے سے بھی روکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے مابین تعلقات خصوصا تجارتی اور اقتصادی تعلقات کی توسیع پر زور دیتے ہوئے دونوں ممالک کے مابین صحت اور سائنسی تعاون کے فروغ کے ساتھ ہی کرونا وائرس سے لڑنے میں تجربات اور معلومات کے تبادلے کو لازمی قرار دیا.

فریقین نے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کے اچھے پس منظر کا حوالہ دیتے ہو‏ئے دونوں ممالک کے مابین موجودہ نئی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھانے اور مشترکہ منصوبوں کے نفاذ پر زور دیا۔

دونوں ممالک کے صدور نے امریکہ کی انسانیت سوز پابندیوں اور مظلوم فلسطینی عوام کے خلاف غیر انسانی جرائم کے خلاف بین الاقوامی تعاون کو مضبوط کرنے کے ساتھ ساتھ شام اور یمن میں امن و استحکام کے قیام کیلیے باہمی تعاون کو مزید مضبوط بنانے پر زور دیا۔

ایرانی صدر نے ایران کیخلاف امریکی غیر انسانی کارروائیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کرونا کے پھیلنے کی ایسی صورتحال میں جو ممالک کے درمیان تعلقات کو پہلے سے کہیں زیادہ فروغ دینا جانا چاہیے،بدقسمتی سے امریکہ نے ایرانی قوم کے خلاف غیر قانونی پابندیاں سخت کردی ہیں اور بین الاقوامی قوانین کو نظر انداز کرنے کے علاوہ ایران کو صحت اور علاج شعبے میں سامان کے تبادلے کو بھی روکتا ہے۔

ایرانی صدر نے سلامتی کونسل کے غیر مستقل ممبر کی حیثیت سے جنوبی افریقہ کی رکنیت کا ذکر کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ ہم توقع کرتے ہیں کہ اقوام متحدہ اور عالمی برادری، امریکی یکطرفہ پن اور ایران کے خلاف اس کی غیر قانونی پابندیوں کی زیادہ سے زیادہ مخالفت کریں۔

اس موقع میں جنوبی افریقی صدر نے کہا کہ ہم ایران کے خلاف امریکہ کی ظالمانہ اور غیر قانونی کارروائیوں سے پوری طرح واقف ہیں اور اس حوالے سے ایران کی حمایت کے لیے اپنے موقف کو جاری رکھیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ اب وقت آگیا ہے کہ مشترکہ دشمن (کورونا وائرس) کے خلاف مل کر کام کریں اور اب وہ وقت نہیں ہے کہ پابندیاں اور دباؤ کے عائد کرنے کے ساتھ قوموں کے لئے مشکلات پیدا کریں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha