کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے عالمی اقدامات کی ضرورت ہے: عراقچی

تہران، ارنا- نائب ایرانی صدر برائے سیاسی امور نے کہا ہے کہ کرونا وائرس اور اس کے معاشی اثرات کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے اپنے مالی وسائل تک رسائی، ایرانی عوام کا حق ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرونا وائرس کے عالمگیر وبا کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے عالمی اور اجتماعی اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔

ان خیالات کا اظہار "سید عباس عراقچی" نے نیدرلینڈز کے محکمہ خارجہ میں تعینات ڈائریکٹر برائے سیاسی امور "فاندر پلاس" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر دونوں فریقین نے باہمی دلچسبی امور سمیت علاقائی اور بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال کیا۔

عراقچی نے کہا کہ کرونا وائرس، نہ صرف ایران بلکہ دنیا کے اکثر ملکوں میں پھیلا ہوا ہے لہذا اس کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے اجتماعی اقدامات اٹھانے اور باہمی کوششوں کی ضرورت ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران، اس موقع پر کرونا وائرس کے علاوہ امریکی غیر قانونی پابندیوں کیخلاف مقابلہ کر رہا ہے اور یہ بات ایرانی عوام پر دباؤ میں مزید اضافہ کر رہی ہے۔

عراقچی نے مزید کہا کہ کرونا وائرس اور اس کے معاشی اثرات کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے اپنے مالی وسائل تک رسائی، ایرانی عوام کا حق ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ امریکی یکطرفہ اور غیر قانونی پابندیاں، اقوام متحدہ کی قومی سلامتی کونسل کی قرارداد نمبر 2231 کی خلاف ورزی ہیں؛ لہذا امریکہ کو بین الاقوامی برادری کو اس حوالے سے جوابدہ ہونا ہوگا۔  

اس موقع پر ڈچ عہدیدار نے کرونا وائرس کے بحران پر ایرانی عوام سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے اس وائرس کیخلاف مقابلہ کرنے کو ایک عالمی فرض قرار دے دیا۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ ان کا ملک عالمی سطح پر کثیر الجہتی کے فروغ اور ساتھ ہی صحت اور سلامتی کو یقینی بنانے کیلئے بین الاقوامی تنظیموں کی امداد پر تیار ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ نیدر لینڈز ایران جوہری معاہدے اور اس سے متعلق میکنزم کی حمایت کا سلسلہ جاری رکھے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha