ایران کیخلاف عائد پابندیوں کو اٹھانے کی کوششیں جاری رکھیں گے: پاکستانی اسپیکر

اسلام آباد، ارنا- پاکستان قومی اسمبلی کے اسپکر نے ایران مخالف امریکی پابندیوں کی منسوخی سے متعالق امریکی ایوان نمائندگان کی خاتون اسپیکر کے نام میں اپنے حالیہ خط کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس کا ملک اس حوالے سے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔

تفصیلات کے مطابق، "اسد قیصر" نے بدھ کے روز پاکستان میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر "سید محمد علی حسینی" کے نام میں ایک خط میں کرونا وائرس کے بحران پر ایرانی حکومت اور عوام سے یکجہتی کا اظہار کردیا۔

انہوں نے اس مشکل صورتحال کے دوران، ایرانی عوام کی حمایت کرتے ہوئے ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی وجہ سے انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کردیا۔

پاکستانی اسپیکر نے کہا کہ ہم کرونا وائرس کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے ایرانی کوششوں پر امریکی پابندیوں کے بُرے اثرات سے بخوبی باخبر ہیں اور اس سلسلے میں وزیراعظم "عمران خان" نے ایران مخالف امریکی پابندیوں کے بُرے اثرات کو دنیا میں اجا گر کرتے ہوئے واشنگٹن سے ان پابندیوں کے اختتام کا مطالبہ کیا۔

انہوں نے ایران مخالف پابندیوں کی منسوخی سے متعلق امریکی ایوان نمائندگان کی خاتون اسپیکر"نینسی پیلوسی" کے نام میں اپنے حالیہ خط کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس کا ملک اس حوالے سے اپنی کوششیں جاری رکھے گا۔

قیصر نے اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر سے مطالبہ کیا کہ ان کے نیک خواہشات کے پیغام کو ایرانی حکومت اور عوام بالخصوص ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر"علی لاریجانی" کا حوالہ کیجیے۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاکستانی اسپیکر نے 6 اپریل کو اپنے ایرانی ہم منصب کی جلد صحتیابی کیلئے دعا کرتے ہوئےکہا کہ اسلام آباد ویسے ہی ایران کیخلاف امریکی پابندیوں کی منسوخی سے متعلق اپنے موقف پر ڈٹ کر کھڑا ہے۔

اس کے علاوہ پاکستانی سینٹ کے سربراہ اور نائب سربراہ نے بھی الگ الگ پیغامات میں ایرانی حکومت اور عوام سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کرونا وائرس کا شکار ایرانی اسپیکر کی صحت کی دعا کی۔

 اس سے پہلے پاکستانی وزیر اعظم نے ایران مخالف امریکی پابندیوں کو ظالمانہ قرار دیتے ہوئے 22 مارچ کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے نام میں ایک خط میں ان سے ان پابندیوں کے خاتمے کا مطالبہ کیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha