ایران نے تیل کی آمدنی کے خاتمے کی صورتحال کے مطابق ڈھال لیا ہے: نائب ایرانی صدر 

تہران، ارنا- سنیئر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران، اچھے انتظام اور منصوبہ بندی کے ذریعے ملکی بجٹ سے تیل کی آمدنی کو ہٹانے کے حالات کے مطابق ڈھالنے میں کامیاب رہا ہے۔

ان خیالات کا اظہار "اسحاق جہانگیری" نے منگل کے روز ایرانی محکمہ برائے مواصلات اور شہری ترقی کے اعلی عہدیداروں کیساتھ ایک اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر انہوں نے عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت کی کمی پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ متعدد بحران اور ایران مخالف امریکی پابندیوں نے ایران کو ایسی صورتحال کے انتظام کیلئے تیار کرلیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ عالمی جی ڈی پی کے 25 فیصد کا حصہ امریکی معیشت کے زیر قبضہ میں ہے اور وہ گزشتہ رات سے تیل کو منفی قیمتوں میں فروخت کر رہا ہے جس سے ظاہر ہوتی ہے کہ کرونا وائرس، باقی دیگر ممالک کی معیشتوں پر اثرات مرتب کر رہا ہے۔

جہانگیری نے کہا کہ تیل پر منحصر دیگر اشیاء جیسے پیٹروکیمیکل انڈسٹری اور یہاں تک کہ دھاتیں بھی کرونا وائرس کے بُرے اثرات سے متاثر ہوں گے

انہوں نے یونیورسٹیوں اور سائنسی مراکز سے اس مسئلہ کا سائنسی حل فراہم کرنے اور ایجنسیوں سے مناسب پروگرام تیار کرنے کا مطالبہ کیا۔

جہانگیری نے زلزلے اور سیلاب جیسی قدرتی آفات سے تباہ شدہ مکانات کی تعمیر و مرمت میں اسلامی انقلاب کی ہاؤسنگ فاؤنڈیشن کے اقدامات کو قابل قدر قرار دیا اور کہا کہ ڈھائی لاکھ دیہی مکانات کی از سر تعمیر نو کی گئی ہے اور ان کے مالکان کو دی گئی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha