کرونا وائرس کی روک تھام میں آذربائیجان سے تجربات کے تبادلہ پر تیار ہیں: صدر روحانی

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ممکلت نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ کرونا وائرس کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے ضروری سہولیات کو آذربائیجان کیلئے بھیجنے پر تیار ہیں۔

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر "حسن روحانی" نے آج بروز پیر کو اپنے آذربائیجان کے ہم منصب "الہام علی اف" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران کیا۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ حکومت کیجانب سے اٹھائے گئے اقدامات، حفاظتی تدابیر کےعمل کرنے پر ایرانی عوام کے اچھے تعاون اور طبی ٹیموں کی کوششوں کیساتھ ہم کرونا وائرس کو کنٹرول کرنے جار رہے ہیں۔

انہوں نے دونوں ملکوں کے درمیان دوستانہ اور اچھے تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ باہمی تعاون سے ظاہر ہوتی ہے کہ ایران اور آذربائیجان مشکل حالات میں ایک دوسرے کیساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔

صدر روحانی نے اس امید کا اظہار کردیا کہ دونوں ملکوں کے درمیان طے پانے والے معاہدوں بشمول رشت- آستارا ریلوے کا جلد از جلد نفاذ ہوجائے گا۔

انہوں نے رمضان الکریم کی آمد پر آذربائیجان کے عوام اور حکومت کو مبارکباد دیتے ہوئے دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کے فروغ پر زور دیا۔

تہران اور باکو کے درمیان طے پانے والے معاہدوں کے نفاذ پر زور

در این اثنا آذربائیجان کے صدر نے کرونا وائرس کیخلاف اٹھائے گئے اقدامات کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاون کے نفاذ کے باوجود پھر بھی ریلوے کے شعبوں میں دونوں ملکوں کے درمیان طے پانے والے معاہدوں پر عمل درآمد کا سلسلہ جاری ہے۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ کوویڈ- 19 کے پھیلاؤ کی وجہ سے رونما ہونے والی نازک صورتحال کے باوجود رشت- آستار ریلوے منصوبے کے آپریشنل کا ویڈیو کانفرنس میں جائزہ لیں گے۔

آذربائیجان کے صدر نے کرونا وائرس کے کنٹرول پر ایرانی کامیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ  ایران کا ایک مضبوط صحت کا نظام ہے اور ہم کوویڈ- 19 کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے ایرانی تجربات سے فائدہ اٹھانے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

انہوں نے رمضان الکریم کی آمد پر ایرانی حکومت اورعوام کو مبارکباد دیتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا کہ  دونوں ملکوں کے تعلقات میں مزید اضافہ ہوجائے گا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha