غزہ کا محاصرہ اور ایران مخالف پابندیوں سے اسرائیل اور امریکہ کی غیر انسانی نوعیت کا پتہ چلتا ہے: لاریجانی

تہران، ارنا - ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کرونا بحران کے سلسلے میں ایران مخالف پابندیاں اور غزہ کے محاصرے کو اسرائیل اور امریکہ کی غیر انسانی نوعیت کی علامت قرار دیتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ دنیا کے کرونا کے بعد ، اقوام عالم کے حقوق پر نظر ثانی اور انسانی شناخت کو بحال کرنے کا ایک موقع ہے اور تسلط کے نظام کو اپنے طرز عمل کو تبدیل کرنے کے لئے انسانی بحرانوں سے سبق حاصل کرنا ہوگا۔

یہ بات "علی لاریجانی" نے فلسطینی تحریک حماس کے سربراہ "اسماعیل ہنیہ" اور فلسطین کے اسلامی جہاد تنظیم کے سیکرٹری جنرل "زیاد النخالہ' کے ساتھ الگ الگ ٹیلی فونک رابطوں میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے ایرانی اسپیکر کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کرتے ہوئے کہا کہ علی لاریجانی خطے میں مزاحمتی تحریک خصوصا فلسطین کے مظلوم عوام کے حامی ہیں۔
لاریجانی نے ہنیہ کے ساتھ گفتگو میں کہا کہ چونکہ دنیا کرونا بحران سے دوچار ہے ، ناجائز صہیونی ریاست کی غیر انسانی نوعیت کو ثابت کرنا غزہ کے محاصرے کا تسلسل کافی ہے ، جیسا کہ امریکی حکومت کی غیر انسانی نوعیت کو بے نقاب کرنے کے کے لئے ایران کے خلاف پابندیوں کا تسلسل ہی اس کا بہترین ثبوت ہے۔
ایرانی اسپیکر النخالہ کے ساتھ گفتگو میں کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اسلامی مزاحمتی محاذ کے مجاہدین جلد سے جلد صہیونیوں کے خلاف جنگ میں کامیاب ہوں گے، اور اس میں کوئی شک نہیں کہ خدا کا یہ وعدہ آپ اور دیگر اسلامی تحریکوں کی کوششوں سے پورا ہوگا۔
 ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha