ایران میں مقیم غیرملکی شہریوں کا علاج مفت ہے: ایرانی صدر

تہران، ارنا – ایرانی صدر مملکت نے کہا ہے کہ کرونا سے مبتلا غیر ملکی شہریوں جو قانونی طور پر ایران میں رہتے ہیں؛ کا علاج مفت ہے۔

یہ بات ڈاکٹر حسن روحانی نے  آج بروز بدھ اپنی کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

انہوں نے کہا کہ ایران میں ڈاکٹرز، نرسیں اور تمام طبی ٹیم 24 گھنٹے مریضوں کی خدمت میں مصروف رہتے ہیں اور کسی بھی کوشش دریغ نہیں کر رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کچھ ممالک میں مریضوں کے لیے ہسپتال میں خالی بیڈ ہونے کے باوجود نرس اور ڈاکٹر کافی نہیں ہیں۔

روحانی نے کہا کہ اعداد اور آمار کے مطابق یہاں تک کہ کچھ ممالک میں آئی سی یو کے پاس بیڈ بھی کافی نہیں ہے۔

ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ایران میں کرونا کے پھیلنے کے بعد سے ہم کسی کو نہیں جانتے ہیں جو بیڈ کی کمی یا مالی غربت کی وجہ سے اس کا علاج نہ کریں اور اسپتال میں داخل ہونے کی اجازت نہ دیں۔

 انہوں نے کہا کہ ملک کو درکار صحت کی اشیاء کی فراہمی کے لئے ایک جامع کوشش کا آغاز کیا گیا ہے اور سرجیکل گاؤن، ماسک، ادویات دستانے روزانہ اسپتالوں کے لیے مہیا کیا جاتاہے۔

چین کے شہر ووہان سے دسمبر 2019 ء میں کورونا وائرس کا آغاز ہوا جو اب دنیا کے 200 سے زائد ملکوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور 2 ملین افراد اس سے مبتلا ہوگئے ہیں۔

اب تک دنیا میں کرونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 126688 ہے جن میں سے 4683 افراد کا تعلق ایران سے ہے۔

ایرانی محکمہ صحت کے مطابق، اب تک ملک کے اندر مجموعی طور پر کرونا وائرس کے 48،129 افراد علاج ہوگئے ہیں اور 74،877 افراد کو کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 4،683 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha