ہامون بین الاقوامی تالاب کے 40 فیصد کا حصہ پانی سے بھر گیا

زاہدان، ارنا- دریائے ہیرمند سے ہامون بین الاقوامی تالاب میں پانی بہنے اور اسے بھر جانے کی وجہ سے اس تالاب کے 40 فیصد کا حصہ پانی سے بھر گیا۔

ان خیالات کا اظہار پاکستان سے ملحقہ سرحدی صوبے سیستان و بلوچستان کے ڈائریکٹر جنرل برائے ماحولیاتی تحفظ "وحید پور مردان نے" اتوار کے روز ارنا نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے اس امید کا اظہار کردیا کہ ہامون کے تالاب میں مزید پانی کی آمد کیساتھ اس علاقے کے دھول کے مراکز پر قابوپایا جا سکے۔

پور مردان نے کہا کہ ہمارے پاس تین سال قبل پانی کی کافی مقدار تھی لیکن اس تالاب  میں دو دہائیوں کی خشک سالی کی وجہ سے اس پانی کے حجم سے تمام مسائل کو دور نہیں کرسکا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایران کے محکمہ ماحولیات اور اقوام متحدہ کے ترقیاتی پروگرام (یو این ڈی پی) نے ہامون تالاب کی بحالی کے منصوبے پر ایک دستاویز پر دستخط کیے ہیں۔

اس سے قبل ایرانی تالابوں کی حفاظت کے قومی منصوبے کے ڈائریکٹر"علی اراہی" نے ارنا نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ اس منصوبے کا مقصد تالابوں کے ماحولیاتی نظام کی بحالی اور قدرتی وسائل کے انتظام کو فروغ دینا اور ہاموں بین الاقوامی تالاب کے اردگرد مقامی لوگوں کے روزگار کے معیار کو اپ گریڈ کرنے پر توجہ دینا ہے۔

واضح رہے کہ ایران کے جنوب مشرقی میں واقع ہامون بین الاقوامی تالاب ایران اور افغانستان کے مابین مشترکہ ہے؛ یہ ایران کی سب سے بڑی تیسری جھیل ہے اور دنیا کے ساتویں بڑے بین الاقوامی تالاب ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha