ایرانی اسپتالوں میں کورونا وائرس سے متاثرہ متعدد بزرگ افراد کی شفا یابی

قم، ارنا – ایرانی صوبے قوم کی میڈیکل سائنسز یونیورسٹی کے مطابق، اس شہر میں کورونا وائرس سے متاثرہ 106 سالہ بیمار کو مکمل صحت یابی کے ساتھ اسپتال سے فارغ کردیا گیا۔

اس بوڑھے شخص کو تقریبا دو ہفتے تک قم کے اسپتال میں داخل اور فی الحال فارغ کیا گیا ہے۔

صوبے قم سے تعلق رکھنے والے ایک اور 89 سالہ مرد بھی ڈاکٹروں اور نرسوں کی کوششوں کے ذریعے کورونا وائرس کو شکست دینے اور اپنی صحت دوبارہ حاصل کرنے میں کامیاب رہا۔
حاجی علی اکبر شیریں کلام کو مارچ کے وسط میں بخار ، شدید کمزوری اور اسقاط حمل جیسی علامات دیکھنے کے بعد اپنے بچوں کی طرف سے اسپتال لایا گیا تھا  اور ڈاکٹروں کے معائنے کے بعد کورونا وائرس کے امکان کی تشخیص کے ساتھ اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔
حاج علی اکبر کی بیماری تقریبا 20 دن تک جاری رہی ، لیکن خوش قسمتی سے بالآخر وہ صحت یاب ہوگئے اور انہیں اسپتال سے فارغ کردیا گیا ، جس کی وجہ سے میڈیکل عملہ اس کامیابی سے خوش ہوگیا اور صوبے قم کے میڈیا نے صحت یاب مریض کے ساتھ ڈاکٹروں اور نرسوں کی تصاویر کی اشاعت کی۔
ایرانی صوبے زنجان میں ایک 102 سالہ خاتون نے بھی اسپتال میں آٹھ دن رہنے کے بعد کورونا کو شکست دے دی اور خاندانی گلے مل چکی۔
یاد رہے کہ دو ایرانی باشندوں ، جن میں ایک 103 سالہ خاتون اور ایک 90 سالہ مرد بشمول کورونا وائرس سے متاثر تھے ، کو مکمل صحت یابی کے ساتھ اسپتال سے فارغ کردیا گیا۔
ایرانی محکمہ صحت کے مطابق، اب تک ملک کے اندر مجموعی طور پر 55،743 افراد کو کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 3،452 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں اور 19،736 افراد کا علاج بھی ہوچکے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
captcha