امریکی پابندیوں نے ایران کی کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے کوششوں کو روک دیا ہے

تہران، ارنا – ایرانی پارلیمنٹ کی ایگزیکٹو کونسل کی چیئرمین نے کہا ہے کہ امریکی غیر منصفانہ پابندیوں نے کورونا وائرس پر قابو پانے کے لئے ایران کی کوششوں کو روک دیا ہے۔

یہ بات "سید فاطمہ حسینی" نے ہفتہ کے روز اپنے ٹوئٹر پیج میں عالمی بین الپارلیمانی یونین کے صدر " گابریلا کوئباس بارون" کے ہمدردی کے پیغام کے جواب میں کہی۔
انہوں نے مشکل وقت میں اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ ساتھ کھڑے ہونے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے امریکی غیرقانونی پابندیوں کے خاتمے کی ضرورت پر زور دیا۔
حسینی نے کہا کہ ایرانی پارلیمنٹ میں ہمارے ساتھی ایرانیوں پر  کوویڈ-19 کے اثرات کو کم کرنے کے لئے بڑے پیمانے پر کام کرتے ہیں ، اگرچہ امریکی معاشی دہشت گردی اور ناجائز پابندیاں ہماری کوششوں میں رکاوٹ ہے۔
یاد رہے کہ بین الپارلیمانی یونین (آئی پی یو) کے صدر نے ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی کے نام اپنے ایک پیغام میں کورونا وائرس پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کے صحت یابی کے لئے دعا کی۔
تفصیلات کے مطابق، ایرانی اسپیکر میں کچھ علامات سامنے آنے کے بعد  اس نے کوویڈ 19 میں مثبت ٹیسٹ لیا اور اس وقت وہ طبی امداد حاصل کرنے کے لئے قرنطین میں ہیں۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی پارلیمنٹ کے ترجمان نے کہا کہ پارلیمنٹ کے 100 ارکین سے کرونا وائرس کا ٹیسٹ کیا گیا ہے جن میں سے 23 افراد کا ٹسٹ مثبت ہوا ہے۔
 واضح رہے کہ ایرانی محکمہ صحت کے مطابق اب تک ملک میں مجموعی طور پر50468 افراد کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 3160 افراد کا انتقال ہوگئے ہیں جبکہ 16711 متاثرہ افراد بھی صحت یاب ہوگئے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 17 =