ایران کا قیدیوں کی سزا میں معافی اور کمی پر اپنے تجربات کے تبادلہ پر تیار

تہران، ارنا- ایرانی اعلی کونسل برائے انسانی حقوق نے قیدیوں کی سزا میں معافی اور کمی سے متعلق اپنے تجربات کو اقوام متحدہ اور دیگر ممالک کیساتھ شیئر کرنے پر آمادگی کا اظہار کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر 10 ہزار قیدیوں کی سزا میں معافی دی گئی اور اب ایرانی کونسل برائے انسانی حقوق نے ایک بیان میں اس حوالے سے ایرانی عدلیہ کے مثالی تجربات کو دیگر ملکوں سے شیئر کرنے پر اپنی آمادگی کا اظہار کردیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق کوویڈ-19 کیخلاف مقابلہ کرنے کی ایرانی پالیسیوں کے فریم ورک کے اندر اور جیلوں کی صحت کی صورتحال میں بہتری لانے کے سلسلے میں ایرانی عدلیہ نے قانونی شرائط کے مطابق 100 ہزار قیدیوں کو چھوٹی دینے کی منظوری دے دی اور اس منصوبے کا نفاذ کیا گیا۔

جس کے بعد ایرانی کونسل برائے انسانی حقوق نے اس حوالے سے اپنے مثالی تجربات کو دیگر ملکوں سے شیئر کرنے پر تیاری کا اظہار کردیا۔ ‌

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی وزارت صحت کے مطابق اب تک ملک کے اندر 38 ہزار 309 ہزار افراد کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 2640 افراد کا انتقال ہوگئے ہیں اور 12 ہزار 391 افراد بھی صحت یاب ہوگئے ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 11 =