ایران کی کورونا ٹیسٹنگ کی گنجائش دنیا کی اعلی جامعات سے کہیں زیادہ ہے

تہران، ارنا - ایرانی انسٹی ٹیوٹ پاستور کے سربراہ نے حالیہ ہفتوں میں کورونا وائرس سے ہونے والی بیماریوں کا پتہ لگانے کی بڑھتی ہوئی صلاحیت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس انسٹی ٹیوٹ میں اس وائرس کے ٹیسٹنگ سسٹم کی گنجائش امریکہ کی اسٹینفورڈ سمیت دنیا کی معروف یونیورسٹیوں کی نسبت زیادہ ہے۔

یہ بات "علیرضا بیگلری" نے جمعرات کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اسٹینفورڈ یونیورسٹی دنیا کی سب سے معروف یونیورسٹی ہے جو امریکہ کے کیلیفورنیا کے شہر سان فرانسسکو کے قریب پر واقع ہے۔
یونیورسٹی نے اپنے ایک بیان میں اس امید کی ہے کہ یونیورسٹی کے محققین جلد ہی ہر دن کورونا وائرس کے ایک ہزار نئے ٹیسٹ حاصل کر سکیں گے۔
بیگلری نے کہا کہ اسٹینفورڈ یونیورسٹی روزانہ ایک ہزار کورونا وائرس ٹیسٹ کروانے کا ارادہ رکھتی ہے ، جو امریکہ کے کسی بھی دوسرے مرکز سے زیادہ ہے ، جبکہ اسلامی جمہوریہ ایران میں پاستور انسٹی ٹیوٹ تین ہفتوں میں ایک ہزار آٹھ سو کورونا وائرس ٹیسٹ کر چکا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ اگر ہمیں مزید ضرورت ہو تو ہم کورونا وائرس کے ٹیسٹ کرنے میں اضافہ کرسکتے ہیں۔
تفصیلات کے مطابق، اب تک ملک کے اندر مجموعی طور پر 18407 افراد کو کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں جن میں سے 1284 افراد جاں بحق ہوگئے ہیں اور 5979 افراد کا علاج بھی ہوچکے ہیں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 3 =