ایران کو کوویڈ ۔19 کے مقابلہ کرنے کیلئے پانچ ارب ڈالر کے قرض دینے کے مذاکرات جاری ہے: آئی ایم ایف

لندن، ارنا - بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے ترجمان نے کہا ہے کہ اس وقت کوروناوائرس کے پھیلاؤ سے نمٹنے کے لئے ایران کو 5 ارب ڈالر کے قرض دینے پر مذاکرات جاری ہے۔ 

یہ بات اس تنظیم کے ترجمان جس نے اپنا نام ظاہر نہ کرنا چاہتا تھا، منگل کے روز ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
اس موقع پر انہوں نے کہا کہ ہم نے ایرانی حکام کے ساتھ فنڈ سے ہنگامی مالی اعانت کے لئے ان کی درخواست کو بہتر طور پر سمجھنے کے لئے بات چیت کی ہے۔
انہوں نے بین الاقوامی مالیاتی فنڈ نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور ایرانی عوام کے مخالف امریکی پابندیوں پر کیا موقف اپنایا ہے ، جو کورونا مریضوں کی صحت اور طبی سامان کی فراہمی میں پریشانیوں کا باعث ہے کے سوال کے جواب میں کہا کہ فریقین کے مابین آئندہ دنوں اور ہفتوں میں مذاکرات جاری رہیں گے۔

ایرانی مرکزی بینک کے سربراہ عبدالناصر ہمتی نے جمعرات کے روز اعلان کیا تھا کہ ایران اس وائرس سے نمٹنے کے لئے آئی ایم ایف کے ذریعہ مختص کردہ 50 ارب ڈالر کے فنڈ سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے۔
ہمتی نے اپنے انسٹاگرام پیج پر میں کہا کہ آئی ایم ایف کی ڈائریکٹر جنرل ، کرسٹالینا جورجیفا نے کچھ دن پہلے اس بات کی وضاحت کی تھی کہ بین الاقوامی برادری نے درخواست کی ہے کہ آئی ایم ایف 5 ارب ڈالر کے قرض کی پیش کش کرتے ہوئے اس عالمی وبا سے نمٹنے میں سب کی مدد کرے۔ 
ہمتی نے آئی ایم ایف سے اس سلسلے میں اپنی ذمہ داری پوری کرنے کی خواہش کی۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 2 =