18 مارچ، 2020 1:43 PM
Journalist ID: 2392
News Code: 83719947
0 Persons
امریکہ معیشتی اور طبی پابندیوں کو خاتمہ کرے: ایران

اسلام آباد، ارنا – پاکستان کے شہر کراچی میں تعینات ایرانی قونصل جنرل نے کہا ہے کہ امریکہ کو ایران مخالف معیشتی اور طبی پابندیوں کو خاتمہ دینا ہوگا ورنہ ان کے چہرے دنیا بھر کے ضمیر کی عدالت سے زیادہ ناگوار ہوجاتے ہیں۔

یہ بات "احمد محمدی" نے بدھ کے روز"کورونا وائرس کا پھیلاؤ، امریکی انسانی حقوق کے دعووں کا دوبارہ تجربہ" کے نام سے اپنے مضمون ، جس کو انگریزی زبان پاکستانی اخبار فنانشل ڈیلی میں شائع کیا گیا، میں کہی۔
اس موقع پر انہوں نے ایرانی قوم کے خلاف ٹرمپ کے ظالمانہ رویہ اور وائٹ ہاؤس کی انسانیت کے خلاف پالیسیوں کے تسلسل کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ دنیا کے اکثر ممالک کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا شکار ہوجاتے ہیں اور اس کے خاتمے کے لئے بھرپور کوششیں کی جاتی ہیں۔
محمدی نے کہا کہ بد قسمتی سے اسلامی جمہوریہ ایران ان ممالک میں سے ہے کہ اس وائرس کا سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے مگر ایرانی حکومت اور  فوجی فورسز اس کے خاتمے کے لئے بھرپور کوشش کر رہی ہیں۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہماری قوم اور پوری دنیا کی دوسری قوموں کی کوششوں کے درمیان اہم فرق یہ ہے کہ ایرانی قوم تاریخ کے سب سے سفاک اور ظالمانہ معاشی اور طبی دہشت گردی کا شکار ہے جو 2018 کے مئی مہینے میں امریکہ کی اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کی خلاف ورزی کے ساتھ پیش آیا گیا۔
انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں امریکی پابندیاں بڑی رکاوٹ ہیں اور ایرانی قوم اس وائرس سے نمٹنے کے علاوہ انسانی حقوق کے جھوٹے دعوی کرنے والی حکومت جو انسانیت سمیت صحت کے حق کو نظر انداز رکھتا ہے کو مقابلہ کرتی ہے۔
انہوں نے ٹرمپ کے ایران مخالف دوہرے رویے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ٹرمپ کی حکومت کی غیرقانونی پابندیوں نے ایرانی تیل کی برآمدات، زرمبادلہ کے وسائل تک رسائی اور مختلف مصنوعات کی درآمدات کو محدود کردی ہے جس سے صحت اور معالجے کے ضروری سامان کی فراہمی میں مختلف مشکلات کا سامنا آیا ہے۔
ایرانی قونصل جنرل نے کہا کہ ٹرمپ انتظامیہ کی غیرقانونی پابندیوں کی وجہ سے ہماری کمپنیوں کی ادویات اور میڈیکل سائنس کے سامان کی درآمدات ناممکن ہے جسے انسان حقوق کی کھلی خلاف ورزی کی علامت ہے۔
محمدی نے کہا کہ انسانی حقوق کی عدالت میں ٹرمپ انتظامیہ کا انکار اس وقت اور بھی واضح ہوجاتا ہے جب یہ عوامی طور پر تسلیم کیا جاتا ہے کہ اس نے ایرانی عوام کو ادویات کی فراہمی کو یرغمال بنا لیتے ہو‏ئے اپنی غیر منطقی اور غیر متعلقہ درخواستوں پر اس ادویات کی فروخت کی شرط رکھی ہے۔
انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ٹرمپ کی حکومت کو فوری طور پر ایرانی عوام کے خلاف اپنی معاشی اور طبی دہشت گردی کا خاتمہ کرنا ہوگا تاکہ پاکستانی عوام سمیت آزاد دنیا کی اقوام عالم کے ضمیر کی عدالتوں میں نفرت نہ برتی جائے۔
انہوں نے کہا کہ ہم کا دنیا کے تمام ممالک سے مطالبہ کرتے ہیں کہ نہ صرف امریکی یک طرفہ اور غیرقانونی پابندیوں کو پیروی نہ کریں بلکہ اس حکومت کے رویے سے مخالفت کا اظہار کریں۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 2 =