امریکی پابندیوں سے ایرانی خواتین کی صحت کو خطرہ ہے

تہران، ارنا - ایرانی پارلیمنٹ کی ممبر برائے امور خواتین نے غیر قانونی پابندیوں کی وجہ سے ملک میں صحت اور طبی سہولیات کے فقدان پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان پابندیوں نے خواتین اور لڑکیوں کی جسمانی صحت کے علاوہ ان کی نفسیاتی صحت کو بھی سنگین خطرے میں ڈال دیا ہے۔

یہ بات فریدہ اولاد قباد نے عالمی فاؤنڈیشن برائے دنیا کی خواتین کی سیاسی رہنماؤں کےفاونڈیشن کی چیئرمین ' سیلوانا کوچ مہرین' کو لکھتے ہوئے ایک مراسلے میں مطالبہ کیا کہ ان مشکل اوقات اور عالمی بحران میں ایرانیوں کی آواز کو دنیا تک پہنچائے اور جلد ہی ایرانی عوام  کے خلاف امریکی ظالمانہ پابندیاں خاتمہ کیا جائے۔

ایرانی خاتون عہدیدار نے کہا کہ امریکی ظالمانہ پابندیوں نے طبی سامان اور دوائین اور دیگر ضروریات کی فراہمی کے لیے ایران اور عالمی برادری کی کوششوں کے راستے میں رکاوٹ ڈالی ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 7 =