پابندیوں نے کرونا وائرس کی روک تھام میں رکاوٹیں ڈالی ہیں: ظریف

تہران، ارنا- ایرانی وزیر خارجہ نے کرونا وائرس کی روک تھام میں امریکی یکطرفہ اور ظالمانہ پابندیوں کو ایک بہت بڑی رکاوٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ دنیا اور ایران اس مشکل مرحلے کو پس پشت ڈالیں گے۔

ان خیالات کا اظہار "محمد جواد ظریف" نے اتوار کے روز اپنے آذربائیجان کے ہم منصب "المار ممدیارف" کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران کیا۔

انہوں نے اس ٹیلی فونک رابطے کے دوران کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے تمام ممالک کے درمیان تعاون کی ضرورت پر زور دیا۔

ظریف نے آذربائیجان کی حکومت اور عوام کیجانب سے ایران کی امداد پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ امریکی ظالمانہ پابندیوں نے کرونا وائرس کی روک تھام میں رکاوٹیں حائل کی ہیں۔

ایرانی وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور دنیا اس مشکل مرحلے کو پس پشت ڈالیں گے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ متحدہ عرب امارات کے وزیر برائے خارجہ اور بین الاقوامی امور "شیخ عبداللہ بن زائدآل نہیان" نے بھی ایرانی وزیر خارجہ کیساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے کے دوران، کرونا وائرس کیخلاف مقابلہ کرنے کیلئے ایرانی حکومت اور عوام کیساتھ یکجہتی کا اظہار کردیا۔

واضح رہے کہ ایرانی محکمہ صحت کے شعبہ تعلقات عامہ کے ترجمان کے مطابق اب تک مجموعی طور پر ملک کے اندر 13 ہزار 938 افراد کرونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ کرونا وائرس سے متاثرہ افراد میں سے 724 افراد کا انتقال ہوگئے ہیں اور 4 ہزار 790 افراد بھی صحت یاب ہوگئے ہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 6 =