افغانستان میں داعش کی موجودگی ایران اور پاکستان کی مشترکہ تشویش ہے: پاکستانی وزیر خارجہ

اسلام آباد، ارنا – پاکستانی وزیر خارجہ نے جنوبی ایشیاء کی کشیدگی کے خلاف ایرانی مواقف کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں داعش کی موجودگی ایران اور پاکستان کی مشترکہ تشویش ہے جس کو نظرانداز نہیں کی جانی چاہیے۔

پاکستانی وزیر خارجہ 'شاہ محمود قریشی' نے گزشتہ روز محمد جواد ظریف کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں افعانستان کی آخری صورتحال پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور پاکستان کو افغانستان کے ساتھ طویل مشترکہ سرحدیں ہیں اور ہم داعش کو مشترکہ تشویش کے طور پر دیکھتے ہیں۔

قریشی نے کہا کہ افغانستان میں داعش کی موجودگی ایران اور پاکستان سمیت پڑوسی ممالک کے لئے خطرہ ہے اور ہم کبھی بھی نہیں چاہتے ہیں کہ داعش گروپ افغانستان میں اپنی موجودگی کو مستحکم کرے۔

پاکستانی وزیر خارجہ نے کہا کہ افغانستان میں عدم استحکام اور بدامنی کے تسلسل سے بہت سے پناہ گزینوں پڑوسی ممالک کا رخ کریں گے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 4 =