3 مارچ، 2020 6:17 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83700467
0 Persons
ایران توانائی کے تبادلے کا مرکز بن جائے گا

تہران،ارنا- ایرانی وزیر توانائی نے کہا ہے کہ ایران کی توانائی کے تبادلے کے سلسلے میں زمینی سرحدوں میں تمام پڑوسی ممالک میں اچھی رسائی ہے لہذا ہم توانائی کے تبادلے کے مواصلاتی نقطہ کی حیثیت اختیار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار "رضا اردکانیان" نے ملک کے مختلف صوبوں بشمول اصفہان، لرستان، کرمان، مغربی آذربائیجان، زنجان اور قزوین میں بیک وقت بجلی اور پانی کی صنعت سے متعلق منصوبوں کی افتتاحی تقاریب جو ویڈیو کانفرنس کے ذریعے منعقد ہوئی تھیں، کے موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہون نے مزید کہا کہ ملک میں بجلی پیدوار کی صلاحیت رواں سال کے اختتام تک 83 ہزار 600 میگاواٹ تک پہنچ جائے گی جس کی مقدار ملک کی 80 لاکھ سے زائد آبادی کے پیش نظر اچھی سطح پر ہے اور عوامی فلاح و بہبود سمیت منصوبوں کیلئے بنیادی ڈھانچے کی فراہمی اور ان میں ترقی اور توسیع  کے عالمی معیاروں کے مطابق ہے۔

اردکانیوں نے ملک کے مختلف صوبوں میں 3 ہزار میگاواٹ کی صلاحیت کے حامل نئے تھرمل پاور پلانٹس کے قیام پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ آج توانائی کا اہم کردار ہم سب پر واضح ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ توانائی نہ صرف گھریلو اور تجارتی استعمال کیلئے ہے بلکہ معاشرے کی فلاح و بہبود، سلامتی اور پیداوار کے فروغ سمیت کان کنی، صنعت اور زراعت کے شعبوں اور صحت کی دیکھ بھال اور سائنس اور تحقیق کی توسیع اور ترقی میں بھی اس کا اہم کردار ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 12 =