امریکہ کو افغانستان کے مستقبل کا تعین کے لیے کوئی قانونی حق نہیں ہے: ایران

تہران، ارنا – ایرانی وزارت خارجہ نے امریکہ اور طالبان کے درمیان معاہدے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ہم افغانستان میں کسی بھی امن عمل کا خیر مقدم کرتے ہیں لیکن امریکہ کو اس ملک کے مستقبل کا تعین کرنے کے لیے کوئی قانونی حق نہیں ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ کے بیان میں آیا ہے کہ افغانستان میں پائیدار امن کا معاہدہ صرف افغان سیاسی گروپوں کے درمیان باہمی تعاون اور مذاکرات کے ذریعے ممکن ہے۔

اس بیان کا کہنا ہے کہ افغانستان میں غیر ملکی فوج کی موجودگی غیر قانونی ہے اور اس ملک میں جنگ اور عدم تحفظ کی ایک بنیادی وجہ ہے تو افغانستان میں امن و سلامتی کے حصول کے لئے ان فورسز کا انخلا لازمی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گرشتہ روز دوحہ میں امریکہ اور افغان طالبان کے درمیان تاریخی امن معاہدے پر دستخط کر دیے گئے ہیں۔ امریکہ کی جانب سے زلمے خلیل زاد جبکہ طالبان کی طرف سے ملا عبدالغنی برادر نے دستخط کیے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 6 =