برطانوی تنظیم کا ادویات سے متعلق ایران کیخلاف عائد پابندیاں اٹھانے کا مطالبہ

لندن، ارنا- برطانیہ کا اسلامی حقوق کمیشن نے اقوام متحدہ کے سربراہ کے نام میں ایک خط میں اس تنظیم سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کرونا وائرس پھیلاؤ کے پیش نظر واشنگٹن پر دباؤ میں اضافہ کرے تا کہ وہ ادویات سے متعلق ایران کیخلاف عائد پابندیوں کو اٹھائے۔

برطانوی اسلامی حقوق کمیشن کے سربراہ "مسعود شجرہ" نے اس خط میں مزید کہا ہے کہ ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر ادویات، ٹیسٹ کی کٹس، جراثیم کشی کیلئے ضروری مصنوعات کی ضرورت ہے لیکن امریکی پابندیوں کی وجہ سے  ہم اس کو آسانی سے فراہم نہیں کر سکتے۔

انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ صورتحال میں پابندیوں کا تسلسل، انسانی حقوق کی کھلی توہین ہے جو ایران اور علاقے کے عوام کو براہ راست نشانہ بنایا گیا ہے۔

 شجرہ نے مزید کہا کہ عالمی ادارہ صحت کے ماہرین کا عقیدہ ہے کہ امریکی پابندیاں، ایران میں کرونا وائرس کی روک تھام کی راہ میں بہت بڑی رکاوٹ ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ بین الاقوامی برادری سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ امریکہ کیخلاف دباؤ ڈال دیں تا کہ وہ ادویات کے شعبے میں ایران کیخلاف لگائی پابندیوں کو منسوخ کرے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ حالیہ دنوں میں اوورسیز ایرانیوں نے اقوام متحدہ اور عالمی ادارہ صحت کے حکام کے نام میں ایک خط میں ایران میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر ان سے ادویات کے شعبے میں ایران کیخلاف عائد پابندیوں کو اٹھانے کیلئے سنجیدہ اقدامات کا مطالبہ کیا۔

ایران کی نیوز اینجسی کے سابق سربراہ "ابوالفضل فاتح" کی تجویز میں لکھے گئے اس خط میں کہا گیا ہے کہ ادویات اور طبی ساز و سامان کے شعبے میں ایران کیخلاف بالواسطلہ اور بلاواسطہ لگائی گئی پابندیاں، ملک میں کرونا وائرس کے مزید پھیلاؤ کا باعث بن سکتی ہیں اور عوام کی زندگی کو مزید خطرے کا شکار کرسکتی ہیں۔

خط میں اس بات کا ذکر کیا گیا ہے کہ اس صورتحال میں بیماروں کی تعداد میں اضافے کے ساتھ ساتھ ادویات اور طبی ساز و سامان کے ذخائر میں کمی آئے گی۔

اس خط کے لکھنے والے نے اوورسیز ایرانیوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ادویات اور طبی ساز و سامان کے شعبے میں ایران کیخلاف عائد پابندیوں کو اٹھانے کے مقصد سے اس مراسلے پردستخط کر دیجیئے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 8 =