29 فروری، 2020 9:54 AM
Journalist ID: 2392
News Code: 83694873
0 Persons
پمپیو کے مدد کرنے کا دعوی منافقانہ ہے: ایران

تہران، ارنا - ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے امریکی وزیر خارجہ کے بیانات جو وائرس کورونا سے مقابلے کرنے کے لئے ایران کی مدد کرنے کے دعوے کو عالمی رائے عامہ کو دھوکہ دینا اور سیاسی وجوہات کی بنا پر ایک پروپیگنڈا اور منافقانہ اقدام قرار دیا۔

یہ بات "سید عباس موسوی" نے گزشتہ روز مائک پمپیو کے بیانات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے کہا کہ ایک ایسے ملک کی طرف سے کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں ایران کی مدد کے دعوی جو معاشی دہشت گردی کے ذریعہ ایرانی عوام پر وسیع دباؤ ڈالتا ہے اور یہاں تک کہ دوائیوں اور طبی سامان کی خریداری کو بھی روکتا ہے، یہ مضحکہ خیز اور سیاسی - نفسیاتی کھیل ہے۔
موسوی نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ مختلف ممالک کے ساتھ ملک کی صحت کی ضروریات کو پورا کرنے اور کورونا وائرس کے خلاف لڑنے کے لئے قریبی رابطے میں ہے اور ایک لاکھ تشخیصی کٹس ، سرجیکل ماسک وغیرہ طبی ضروریات دوست ممالک کے ذریعہ فراہم کی گئی ہیں اور دیگر سامان راستے میں ہے ، جو بروقت مطلع کیا جائے گا۔
انہوں نے مزید کہا کہ کورونا وائرس کا مقابلہ کرنا ، جو اب ایک عالمی وبا کی شکل اختیار اور بہت سارے ممالک میں پھیل چکا ہے ، عالمی عزم اور وسیع بین الاقوامی تعاون کی ضرورت ہے ، نہ کہ سیاسی طور پر حوصلہ افزائی کرنے والے مظاہرے کے اقدامات۔
یاد رہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے گزشتہ روز اپنے ٹوئٹر پیج میں دعوی کیا کہ ہمیں ایران اور اس کے ہمسایہ ممالک میں وائرس کورونا کے پھیلاؤ پر تشویش ہے اور امریکہ ایرانی عوام کو انسانی امداد کرے گا۔
تفصیلات کے مطابق ، ایران میں کورونا وائرس سے جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 34 افراد تک پہنچ گئی ہے اور 388 افراد اس بیماری سے مبتلا ہیں۔
 چین کے سب سے زیادہ آبادی والے شہر ووہان میں دسمبر 2019 کے آخر میں نئے کورونا وائرس  کا وباء ریکارڈ کیا گیا۔
ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے اسے بین الاقوامی تناسب کی ہنگامی صورتحال کے طور پر تسلیم کرکے اسے متعدد مقامات پر مشتمل ایک وبا کے طور پر بیان کیا ہے۔ چین سے باہر اسلامی جمہوریہ ایران سمیت 27 ممالک میں انفیکشن کا پتہ چلا۔
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
2 + 4 =