26 فروری، 2020 4:48 PM
Journalist ID: 1917
News Code: 83692455
0 Persons
یورپ جوہری معاہدے کے تحفظ پر دلچسبی رکھتا ہے: عراقچی

لندن، ارنا- نائب ایرانی صدر برائے سیاسی امور نے یورپی فریقین کیجانب سے جوہری معاہدے کے تحفظ پر دلچسبی کے اظہار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یہ بین الاقوامی معاہدہ ابھی زندہ ہے۔

ان خیالات کا ظہار "سید عباس عراقچی" نے بدھ کے روز ویانا میں جوہری معاہدے کے مشترکہ کمیشن کے 15 ویں اجلاس کے اختتام کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ جوہری معاہدے کے اختلافات کے حل کے میکنزم کے نفاذ کیلئے فریقین کے درمیان اختلاف رائے ہے تاہم اس اجلاس کے موقع پر اسی حوالے سے کوئی بات چیت نہیں ہوئی۔

اس موقع پراس اجلاس میں شریک چین کے نمائندے نے بھی ارنا نمائندے کیساتھ گفتگو کرتے ہوئے ایران کیخلاف اقوام متحدہ کی پابندیوں کے از سرنو نفاذ کیلئے امریکی کوششوں کی وارننگ دی۔

واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے گزشتہ 8 مئی کو یہ فیصلہ کیا تھا کہ جوہری معاہدے کے بعض احکامات پر عمل نہیں کرے گا اور معاہدے کے فریقین کو بھی 60 دن کا الٹی میٹم دیا تا کہ وہ تیل اور بینکاری شعبوں کے علاوہ دیگر امور سے متعلق اپنے وعدوں پر عمل کریں۔

جوہری معاہدے سے امریکہ کی غیرقانونی علیحدگی سے ایک سال سے زائد گزر گیا اور اسی دوران ایران نے صبر و تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے دیگر فریقین کو اس نقصان کا ازالہ کرنے کا کافی وقت دیا۔

لیکن یورپی فریقین نے اپنے کیے گئے وعدوں کو پورا نہ کرنے کی وجہ سے اسلامی جمہوریہ ایران جوہری وعدوں کے کچھ حصے سے دستبردار ہوگیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایران کے اس اقدام کے بعد برطانیہ، فرانس اور جرمنی کے وزرائے خارجہ نے حالیہ دونوں میں مشترکہ بیان میں تنازع کے حل کے میکنزم کے کھولنے کا اعلان کیا اور کہا کہ یورپی ممالک اب بھی جوہری معاہدے پر عمل درآمد کے خواہش مند ہیں۔

دوسری جانب ایران نے یورپی بیان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یورپی ممالک اس عمل کا ناجائز استعمال چاہتے ہیں تو پھر وہ نتائج بھگتنے کے لئے بھی تیار رہیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
6 + 5 =