آئندہ انتخابات سے ملک اور اسلامی نظام کی عزت کو تقویت ملے گی: ایرانی سپریم لیڈر

تہران، ارنا – ایرانی سپریم لیڈر نے فرمایا ہے کہ آئندہ پارلیمانی انتخابات سے ملک اور اسلامی نظام کی عزت کو تقویت ملے گی لہذا تمام عوام کو انتخابات میں حصہ لینے کی ضرورت ہے۔

ان خیالات کا اظہار آیت اللہ العظمی "سید علی خامنہ ای" نے منگل کے روز 1978 کے 18 فروری کو تبریزی عوام کی بغاوت کی مناسبت سے صوبے آذربائیجان شرقی کے عوام کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا.

آیت اللہ خامنہ ای نے فرمایا کہ پارلیمانی انتخابات امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست کی ایران مخالف سازشوں کی شکست کا باعث بنے گا.
انہوں نے ایرانی قوم اور نظام کے مابین افراتفری کے لئے امریکہ اور صہیونیوں کی کاروائیوں کا حوالہ دیتے ہوئے فرمایا کہ وہ ایرانی جوانوں کو اسلامی نظام سے دور کرنے کے لئے بھرپور کوشش کر رہے ہیں مگر کوئی نتیجہ حاصل نہیں کریں گے.
قائد اسلامی انقلاب نے فرمایا کہ ایران کے دشمنوں اور دوستوں کی توجہ انتخابات کی طرف مبذول کروائی جاتی ہے ، کہ دشمن ایرانی عوام پر معاشی پریشانیوں ، پروپیگنڈوں ، یورپی عدم پابندی اور امریکی دباؤ کے نتائج کا انتظار کر رہے ہیں جبکہ پوری دنیا میں ہمارے دوست بھی پریشان اور انتخابات کے نتائج کا منتظر ہیں۔
رہبر معظم نے ایک بار پھر ایران کی مزید مضبوطی پر زور دیا اور فرمایا کہ ہم نے بار بار کہا کہ اگر ایران مضبوط تر ترقی کرے تو دشمن مایوس ہوجائے گا اور دشمن کی سازشوں کی شکست کا سامنا ہوں گی۔
ایرانی سپریم لیڈر نے ٹرمپ کے براہ راست حکم کے ساتھ عراق میں جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کا حوالہ دیتے ہوئے فرمایا کہ امریکیوں کے یہ جرم کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ اور ان کے ساتھی واقعی طور پر الگ تھلگ اور اپنے غلطی اقدامات پر واقف ہوگئے ہیں.
تفصیلات کے مطابق، 11ویں پارلیمانی انتخابات کے لئے 21 فروری کو اسلامی جمہوریہ ایران بھر میں ووٹ ڈالے جائیں گے اور 290 نشستوں کے لئے 7157 امیدوار ایک دوسرے مقابلے کریں گے.
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے.IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
8 + 10 =