ایرانی صدر نے اپنے لبنانی ہم منصب کو دورہ تہران کی دعوت دی

بیروت، ارنا- لبنان کے دورے پر آئے ہوئے ایرانی پارلمینٹ کے اسپیکر نے لبنانی صدر کیساتھ ایک ملاقات میں ان کو صدر روحانی کے مراسلے کا حوالہ کر دیا جس میں انہوں نے اپنے لبنانی ہم منصب کو دورہ تہران کی باضابطہ دعوت دی تھی۔

 تفصیلات کے مطابق "علی لاریجانی" نے آج بروز پیر کو "میشل عون" سے ملاقات کی۔

 اس موقع پر انہوں نے لبنانی صدر کے نام میں صدر روحانی کے مراسلے کو ان کا حوالہ کردیا۔

اس مراسلے میں دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات کی توسیع کے طریقوں کا جائزہ لیا گیا ہے اور ساتھ ہی صدر روحانی نے اپنے لبنانی ہم منصب کو دورہ ایران کی باضابطہ دعوت دی ہے۔

اس موقع پر لاریجانی نے فلسطینی اور شامی پناہ گزینوں کی وطن واپسی سے متعلق ایرانی موقف پر زور دیتے ہوئے ان پناہ گزینوں کو لنبان میں مستقل رہائش پذیر ہونے کی تجویز کا مسترد کر دیا۔

اس کے علاوہ دونوں فریقین نے مشرق وسطی کی تازہ ترین صورتحال، حلب اور ادلب کے علاقوں میں شامی فوجی کی پیشرفت، شام میں امن اور استحکام کی اہمیت اور پناہ گزینوں کی صورتحال سمیت ایران اور لبنان کے تعلقات پر تبادلہ خیال کیا۔

 ایرانی اسپیکر نے لبنان کے صدر کو نئی حکومت کی تشکیل پر مبارکباد دیتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران لبنان کی معاشی صورتحال میں بہتری آنے کیلئے تعاون پر تیار ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور لبنان باہمی تجارتی اور مالی لین دین کو اور بڑھا سکتے ہیں اور ساتھ ہی مختلف شعبوں بشمول پانی، بجلی، گیس، تیل اور پیٹرو کیمیکل صنعت میں تعاون کر سکتے ہیں۔

علی لاریجانی نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران، لبنان سے سائنسی، فنی اور ثقافتی تعلقات کے فروغ پر تیار ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی اسپیکر دورہ لینان کے موقع پر لبنان ک مزاحمتی تنظیم حزب اللہ کے سربراہ سید "حسن نصراللہ"، اپنے لبنانی ہم منصب "نبیہ بری" اور لبنانی وزیر اعظم "حسان دیاب" سے الگ الگ ملاقاتیں کیں۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
9 + 8 =