ایران اور جرمنی کے وزرائے خارجہ کا جوہری معاہدے پر تبادلہ خیال

 تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران اور جرمنی کے وزرائے خارجہ نے ایک ملاقات میں خطے کی سیاسی اور سلامتی صورتحال سمیت مغربی ایشیا میں امریکی غلطیوں اور جوہری معاہدے سے متعلق یورپ کے کیے گئے وعدوں پر بات چیت کی۔

تفصیلات کے مطابق "محمد جواد ظریف" نے آج بروز ہفتہ کو میونیخ سیکورٹی کانفرنس کے موقع پر اپنے جرمن ہم منصب " ہایکو ماس" سے ملاقات کی۔

اس ملاقات میں دونوں فریقین نے ایران اور جرمنی کے درمیان باہمی اعتماد کی تقویت اور دوطرفہ تعلقات کے فروغ کے طریقوں کا جائزہ لیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے میونیخ سیکورٹی کانفرنس کی سائڈ لائن میں ایران میں مارگرائے گئے یوکرائنی طیارے سے متعلق منعقدہ اجلاس میں بھی شرکت کی۔

 ایرانی وزیر خارجہ نے اس اجلاس میں طیارے حادثے کے قضائی اور فنی تحقیقات کے عمل سے متعلق بات چیت کرتے ہوئے اس حوالے سے ایران کی ذمہ داری اور ساتھ ساتھ اس مسئلے کو سیاسی رنگ نہ دینے پر زور دیا۔

 ظریف نے اس موقع پر طیارے حادثے کے قضائی پہلو کا جائزہ اور اس حوالے سے تحقیقات کیلئے یوکرائن سے تعاون پر آمادگی کا اظہار کرلیا۔

 اس کے علاوہ انہوں نے یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کونسل کے ممبران سے ملاقات کی۔

ظریف نے میونیخ سیکورٹی کانفرنس کے موقع پر اپنے یوکرائنی، ہسپانوی اور جاپانی ہم منصبوں سے بھی الگ الگ ملاقاتیں کی۔

 یہ بات قابل ذکر ہے کہ ظریف نے گزشتہ روز کے دوران بھی کینیڈین وزیر اعظم سے ایک ملاقات میں باہمی د لچسبی امور پر تبادلہ خیال کیا۔

انہوں نے اپنے چینی ہم منصب "وانگ ایی" سے بھی ملاقات کی اور جوہری معاہدے سمیت مغربی ایشیا، جنرل سلیمانی کی شہادت اور یوکرائنی طیارے حادثے پر گفتگو کی۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
7 + 6 =