خطے میں امریکی فوج کی موجودگی عدم استحکام کا باعث ہے: ایران

نیویارک، ارنا - اقوام متحدہ میں ایرانی نمائندگی نے 13 فروری کو امریکہ کی پريس ريليز کو ایران کے خلاف ایک نیا جھوٹ الزام قرار دیتے ہوئے کہا کہ خطے میں امریکی فوجیوں کی ایک بڑی تعداد کی موجودگی عدم استحکام کا باعث ہے.

اقوام متحدہ میں ایرانی نمائندگی نے جمعہ کے روز اپنے ایک بیان میں 13 فروری کو امریکہ کی پريس ريليز کو ایران کے خلاف ایک نیا جھوٹ الزام قرار دیا۔

اس بیان نے کہا کہ 14 ستمبر 2019 کو سعودی تیل تنصیبات پر حملے کے کچھ گھنٹوں بعد امریکہ نے بلاوجہ اس حملے کو ایران سے منسوب کی، اور اب تک اپنے دعوے کے لیے کوئی ثبوت فراہم نہیں کیا ہے.

بیان میں آیا ہے کہ خطے میں امریکی فوج اور فوجی آلات کی بڑے پیمانے پر تعیناتی، مہم جوئی اور خطے میں اپنے اتحادیوں کو نئی ہتھیاروں کی فراہمی، خلیج فارس میں عدم استحکام اور عدم تحفظ کا سب سے اہم عنصر ہے.

اس بیان کے مطابق، امریکہ کو دوسروں پر الزام لگانے کے بجائے خطے میں اپنی تمام تفرقہ انگیز اور متنازع پالیسیوں کو ختم کرنا چاہئے۔

اس بیان نے کہا کہ امریکہ نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کی کھلی خلاف ورزی کی ہے اور ایک غیر معمولی اقدام کے تحت، دوسرے ممالک کو دھمکی دی ہے کہ اس قرار داد کو مسترد کردیں ورنہ انہیں سزا کا سامنا کرنا پڑے گا.

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
4 + 11 =