پابندیوں کے باوجود ایران میں 97 فیصد ادویات کی پیداوار

 تہران، ارنا-  ایرانی وزیر صحت نے کہا ہے کہ اب ایران اپنی 97 فیصد ادویات کی ضروریات کو ملک کے اندر سے پورا کرتا ہے جو فخر کی بات ہے۔

 ان خیالات کا اظہار "سعید نمکی" نے بدھ کے روز صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے اسلامی انقلاب کے بعد حفظان صحت کے شعبے میں ایرانی کی ترقی اور پیشرفتوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی انقلاب سے پہلے ایران صرف 25 فیصد ادویات کی ضروریات کو ملک کے اندر سے پورا کر سکتا تھا۔

نمکی نے کہا کہ ایران نے ادویات کی پیداوار میں ترقی کے علاوہ دوسرے ملکوں میں ادویات کی برآمدات کر رہا ہے اور ملک میں پچھلے سال کے مقابلے میں ادویات کی قلت میں ایک تہائی کمی دیکھنے میں آئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی انقلاب سے پہلے ملک میں صرف 6 میڈیکل سائنس یونیورسٹیاں موجود تھیں لیکن اب ان کی تعداد 66 تک پہنچ گئی ہے جو ماہرین کی تربیت میں انتہائی اہم کردار ادا کر سکتی ہیں۔

ایرانی وزیر صحت نے کہا کہ اسلامی انقلاب سے پہلے ہسپٹالوں میں بستروں کی تعداد 56 ہزار تھی لیکن اسلامی انقلاب کے بعد ان کی تعداد 120 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔

انہوں نی مزید کہا کہ ایران میں ہیلتھ ہاوس کی تعداد میں قابل قدر اضافہ ہوکر 1080 سے 18000 کی تعداد تک پہنچ گئی ہے۔

نمکی نے مزید کہا اب ملک کی سو فیصد آبادی میں ویکسینیشن کا عمل جاری ہے اور ہمیں ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی جانب سے خسرہ کے خاتمے کا سرٹیفکیٹ موصول ہوا ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ جلد ہی ملیریا کے خاتمے کا جشن منائے جائیں گے۔

ایرانی وزیر صحت نے اسلامی انقلاب کی کامیابی  سے پہلے ملک کے بڑے شہروں کی خواہشات سے ایم آر آئی میڈیکل امیجنگ جیسی خدمات کے آغاز کا بیان کیا جسے اب ملک کے تمام حصوں میں لاگو کیا جارہا ہے۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
3 + 9 =