مدافع حرم شہدا کے 48 خاندانوں نے ٹرمپ کیخلاف مقدمہ درج کروایا

تہران، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران کے مدافع حرم شہیدوں کے خاندانوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کیخلاف مقدمہ درج کروایا۔

یہ بات عدالتی تنظیم کے دائریکٹر مینجر "سید محمد رضا موسوی" نے ہفتہ کے روز ایک پریس کانفرنس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے بین الاقوامی قوانین کے مطابق قدس فورس کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کے قتل میں ملوث بعض امریکی حکام بشمول ڈونلڈ ٹرمپ کیخلاف مقدمہ درج کرنے کا فیصلہ کیا۔

موسوی نے مزید کہا کہ مد افع حرم شہدا کے خاندانوں نے بطور ایک عدالتی تنظیم کے ہم سے مطالبہ کیا کہ امریکہ کیخلاف داعش اور دیگر دہشتگرد گروہوں کی تشکیل میں ادا کرنے کیلئے مقدمہ درج کرلیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے تحقیق اور جائزے کے بعد پرواکسی وار جنگوں کے فریم روک کے اندر تکفیری اور دہشتگردانہ گروہوں کی تشکیل میں امریکی کردار کے متعدد پہلووں کا انکشاف کیا۔

موسوی نے کہا کہ ہم نے 19 امریکی خاندانوں بشمول دہشتگردانہ کاروائیوں کے لیڈرز اور فیصلہ کرنے والوں جیسے ڈونلڈ ٹرمپ، امریکی سابق صدور، پین امریکن ایئر لائنز، سینٹکام کی دہشت گردی فورس، امریکی وزرائے خارجہ اور خزانہ، یو ایس نیوی ، سکریٹری برائے دفاع مائک ایسپر نیز نجی افراد اور دہشت گرد کارروائیوں میں معاونت کرنے والی کمپنیوں کیخلاف مقدمہ درج کرلیا۔

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
1 + 5 =